ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کسانوں کا احتجاج: راکیش ٹکیت بولے۔ اکتوبر سے پہلے نہیں ختم ہو گی تحریک

اس سے پہلے شیوسینا لیڈر سنجے راوت نے منگل کو دلی۔ اترپردیش کی سرحد پر غازی پور میں کسانوں کے مظاہرہ گاہ پر بھارتیہ کسان یونین کے رہنما راکیش ٹکیت سے ملاقات کی۔

  • Share this:
کسانوں کا احتجاج: راکیش ٹکیت بولے۔ اکتوبر سے پہلے نہیں ختم ہو گی تحریک
کسانوں کا احتجاج: راکیش ٹکیت بولے۔ اکتوبر سے پہلے نہیں ختم ہو گی تحریک

نئی دہلی۔ بھارتیہ کسان یونین کے رہنما راکیش ٹکیت (Rakesh Tikait) نے منگل کو کہا کہ کسان تحریک اکتوبر سے پہلے ختم نہیں ہو گی اور ہمارا نعرہ ہے کہ قانون واپسی نہیں تو گھر واپسی نہیں۔ اس سے پہلے شیوسینا لیڈر سنجے راوت (Sanjay Raut) نے منگل کو دلی۔ اترپردیش کی سرحد پر غازی پور میں کسانوں کے مظاہرہ گاہ پر بھارتیہ کسان یونین کے رہنما راکیش ٹکیت سے ملاقات کی۔ کسانوں کے مظاہرہ گاہ پر سیکورٹی بندوبست سخت کر دی گئی ہے۔ راوت دوپہر میں تقریبا ایک بجے یہاں پہنچے اور منچ کے پاس ٹکیت اور دیگر احتجاج کاروں سے ملاقات کی۔ اس وقت راوت سمیت کچھ لوگوں نے ہی ماسک پہن رکھے تھے۔ راوت نے کہا '' 26 جنوری کے بعد جس طرح سے یہاں توڑ پھوڑ ہوئی اور ٹکیت اور تحریک کو کچلنے کی کوشش کی گئی، ہم نے محسوس کیا کہ کسانوں کے ساتھ کھڑے رہنا اور پورے مہاراشٹر، شیوسینا اور ادھو ٹھاکرے کی طرف سے حمایت کرنا ہماری ذمہ داری ہے۔


ٹکیت نے کہا کہ کسانوں کی مخالفت سیاسی نہیں ہے اور کسی سیاسی پارٹی کے رہنما کو اسٹیج پر جگہ یا مائک نہیں دیا گیا ہے۔ سال 2019 تک بی جے پی کی زیر قیادت این ڈی اے کی اہم حلیف شیوسینا ان 19 اپوزیشن پارٹیوں میں سے ایک ہے جس نے 29 جنوری کو صدر کے خطاب کا بائیکاٹ کیا اور کسانوں کی تحریک کو اپنی حمایت دی ہے۔



اس سے پہلے شرومنی اکالی دل، عام آدمی پارٹی، کانگریس اور سماج وادی پارٹی سمیت دیگر پارٹیوں کے رہنماوں نے غازی پور کا دورہ کیا تھا۔ بھارتیہ کسان یونین کی قیادت میں احتجاج کار کسان دو مہینے سے زیادہ وقت سے یہاں ڈٹے ہوئے ہیں۔ احتجاج کار کسان نئے زرعی قوانین کی مخالفت کر رہے ہیں۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Feb 02, 2021 05:20 PM IST