ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

جموں و کشمیر کو اگر پاکستان کے ساتھ جانا ہوتا تو 1947 میں ہی جا چکا ہوتا : فاروق عبداللہ

نیشنل کانفرنس کے صدر و رکن پارلیمنٹ ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہا کہ جموں و کشمیر کو اگر پاکستان کے ساتھ جانا ہوتا تو 1947 میں ہی جا چکا ہوتا اور کوئی روک بھی نہیں سکتا تھا۔

  • UNI
  • Last Updated: Nov 06, 2020 09:40 PM IST
  • Share this:
جموں و کشمیر کو اگر پاکستان کے ساتھ جانا ہوتا تو 1947 میں ہی جا چکا ہوتا : فاروق عبداللہ
جموں و کشمیر کو اگر پاکستان کے ساتھ جانا ہوتا تو 1947 میں ہی جا چکا ہوتا : فاروق عبداللہ

نیشنل کانفرنس کے صدر و رکن پارلیمنٹ ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہا کہ جموں و کشمیر کو اگر پاکستان کے ساتھ جانا ہوتا تو 1947 میں ہی جا چکا ہوتا اور کوئی روک بھی نہیں سکتا تھا۔ انہوں نے کہا کہ یہ شیخ محمد عبداللہ ہی تھے جنہوں نے لوگوں سے کہا کہ ہمارا راستہ پاکستان نہیں بلکہ مہاتما گاندھی کا ہندوستان ہے ۔ ان باتوں کا اظہار فاروق عبداللہ نے جمعے کو یہاں پارٹی ہیڈکوارٹر شیر کشمیر بھون میں ایک اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقعہ پر پارٹی کے نائب صدر عمر عبداللہ، معاون جنرل سکریٹری ڈاکٹر شیخ مصطفےٰ کمال اور صوبائی صدر جموں دیوندر سنگھ رانا کے علاوہ پارٹی لیڈران اور عہدیداران بھی موجود تھے۔


نیشنل کانفرنس صدر نے کہا کہ کافی مدت کے بعد اس سرزمین پر پاوں رکھنے کا موقع ملا ہے ۔ یہ زمین بہت ذرخیز ہے ۔ ہم سے کہا جاتا تھا کہ یہ پاکستانی لوگ ہیں۔ بار بار یہی کہتے تھے۔ اگر جموں و کشمیر کو پاکستان کے ساتھ جانا ہوتا تو یہ 1947 میں جا چکا ہوتا ۔ کوئی روک نہیں سکتا تھا ۔ انہوں نے کہا کہ یہ بی جے پی والے آج لکھن پور کے پار ہوتے ۔ لیکن ایک مرد مجاہد، جس کا نام شیر کشمیر تھا، نے لوگوں سے کہا کہ ہمارا راستہ اس طرف ہے ۔ ہمارا راستہ اُس طرف نہیں ہے۔ ہمارا راستہ مہاتما گاندھی کا ہندوستان ہے بی جے پی کا نہیں ۔


گپکار اعلامیہ کے دستخط کنندگان کے خلاف ہونے والے احتجاجوں کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ جتنی مرضی اتنے ہمارے پتلے جلاو۔ فاروق عبداللہ پتلے جلائے جانے سے نہیں ڈرتا ۔ میرے سامنے آو اور میری دلیل کا جواب دو۔ میں ڈنڈے اٹھاتا ہوں نہ پتھر۔ فاروق عبداللہ اور نیشنل کانفرنس ہر دھرم کی عزت کرتا ہے ۔ ان کا مزید کہنا تھا: 'آپ لوگوں کو اگر ملک کی اتنی فکر ہے تو فوج کی کیا ضرورت ہے۔ سرحد پر جاو اور مقابلہ کرو ۔ کون آپ کو روک رہا ہے ۔ ہمیں بھی دکھاو کہ آپ بڑے سورما ہیں'۔


اجلاس میں پارٹی کارکنوں اور عہدیداروں کے علاوہ سینئر پارٹی لیڈران سرجیت سنگھ سلاتیہ، اجھے سدھوترا، جاوید رانا، مشتاق بخاری، اعجاز جان، وپن پال، باغ حسنین راٹھور، رتن لعل گپتا، کشمیرا سنگھ، ستونت کور ڈوگرا، بملا لوترا، سورن لتا، عبدالغنی ملک، اسلم خان، چودھری ہارون، غنی تیلی، ضلع صدور صاحبان، یوتھ صوبائی کمیٹی و ضلع صدور، وومنز ونگ، ایس ٹی و اوبی سی ونگوں کے عہدیداران بھی موجود تھے۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Nov 06, 2020 09:40 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading