உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    عدلیہ کی صلاحیت پر پورا یقین ، خود ہی سلجھا لیں گے بحران : ارون جیٹلی

    ارون جیٹلی نے نیوز 18 سے خاص بات چیت کی۔

    ارون جیٹلی نے نیوز 18 سے خاص بات چیت کی۔

    مرکزی وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے اس اعتماد کا اظہار کیا ہے کہ ملک کی عدالت عظمی میں پیدا ہوا بحران جلد ہی ختم ہوجائے گا ۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ یہ کوئی پہلی مرتبہ نہیں ہوا اور ہماری جوڈیشیری اس طرح کے مسائل کو حل کرنے کی اہل ہے

    • Share this:
      نئی دہلی : مرکزی وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے اس اعتماد کا اظہار کیا ہے کہ ملک کی عدالت عظمی میں پیدا ہوا بحران جلد ہی ختم ہوجائے گا ۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ یہ کوئی پہلی مرتبہ نہیں ہوا اور ہماری جوڈیشیری اس طرح کے مسائل کو حل کرنے کی اہل ہے ۔
      ارون جیٹلی نے نیوز 18 سے خاص بات چیت میں کہا کہ مجھے لگتا ہے کہ یہ پہلا موقع نہیں جب ایسی چیزیں ہوئی ہیں ، یہ اکثر نہیں ہوتا لیکن مجھے نہیں لگتا کہ یہ پہلی مرتبہ ہورہا ہے ۔ ہمارے اداروں اور ان کے لچیلے پن پر مجھے پورا اعتماد ہے، مجھے پختہ یقین ہے کہ وہ خود اس مسئلے کو سلجھانے میں اہل ہیں۔
      غور طلب ہے کہ سپریم کورٹ کے چار سینئر ججوں جسٹس چلمیشور ، جسٹس رنجن گوگوئی ، جسٹس کورین جوزیف اور جسٹس مدن بی لوکور نے حال ہی میں سپریم کورٹ میں روسٹر سسٹم اور کیسوں کی تقسیم کو لے کر ناراضگی ظاہر کی تھی۔
      چیف جسٹس دیپک مشرا کے ساتھ اختلافات دور نہیں ہونے کی صورت میں چاروں ججوں نے پریس کانفرنس کی تھی ۔ ہندوستانی عدالتی نظام کی تاریخ میں ایسا پہلی مرتبہ ہوا ، جب سپریم کورٹ کے ججوں کو بھی کسی معاملہ کو لے کر عوام کی عدالت میں آنا پڑا ہو۔
      سپریم کورٹ کا تنازع بڑھنے کے بعد چیف جسٹس نے کچھ دنوں پہلے نیا روسٹر بنایا ہے ۔ نئے روسٹر کے مطابق سپریم کورٹ کے ہر ایک جج کو خاص معاملوں کے تحت کیس دیا جائے گا۔
      First published: