உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ملک کے پہلے مسلم ائیر فورس چیف ، جنہوں نے 1971 میں پاکستان کو سکھایا تھا سبق

    ملک کے پہلے مسلم ائیر فورس چیف ، جنہوں نے 1971 میں پاکستان کو سکھایا تھا سبق

    ملک کے پہلے مسلم ائیر فورس چیف ، جنہوں نے 1971 میں پاکستان کو سکھایا تھا سبق

    آج ہندوستان کے پہلے مسلم ائیر فورس چیف ادریس حسن لطیف کا یوم پیدائش منایا جارہا ہے۔ 9 جون 1923 میں ادریس کی پیدائش حیدرآباد میں ہوئی تھی ۔

    • Share this:
      آج ہندوستان کے پہلے مسلم ائیر فورس چیف ادریس حسن لطیف کا یوم پیدائش منایا جارہا ہے۔ 9 جون 1923 میں ادریس کی پیدائش حیدرآباد میں ہوئی تھی ۔ وہ ایک صرف واحد مسلم ائیر فورس افسر تھے جو ائیر چیف مارشل کے عہدہ پر پہنچے تھے ۔

      گزشتہ سال مئی 2018 کو 94 سال کی عمر میں ان کا انتقال ہوگیا تھا ۔ ادریس 18 سال کی عمر میں 1941 میں رائل انڈین ائیر فورس میں بھرتی ہوئے تھے اور 1981 میں ریٹائر ہوئے تھے ۔ اتوار کو دہلی کے اوکھلا میں سماجی ادارہ کی جانب سے ان کے یوم پیدائش کے موقع پر ایک پروگرام منعقد کیا گیا ۔

      اس موقع پر ان کی زندگی کے کئی پہلووں پر روشنی ڈالی گئی ۔ اس موقع پرالگ الگ کلاس میں اول آنے والے بچوں کی حوصلہ افزائی بھی گئی ۔ وہیں ادریس حسن لطیف کے بارے میں بتایا گیا کہ 1947 میں تقسیم ہند کے وقت انہیں پاکستان اور ہندوستان دونوں ائیر فورس میں شامل ہونے کا آپشن ملا ، لیکن انہوں نے ہندوستان کا ہی انتخاب کیا ۔ بعد میں انہیں مہاراشٹر کا گورنر اور فرانس میں ہندوستان کا سفیر مقرر کیا گیا ۔

      ادریس ، ملک کے دسویں فضائیہ چیف بنے تھے ۔ ملک کی تقسیم کے وقت جہاں ایک طرف ان کے دوست ملک نور اور اصغر خان پاکستان چلے گئے اور وہاں کے فوجی سربراہ بنے جبکہ ادرس اپنے دوستوں کے بہت بلانے پر بھی پاکستان نہیں گئے اور ہندوستان میں رہتے ہوئے ہی ائیر چیف بنے ۔



      تقسیم سے پہلے ان تینوں دوستوں نے ہندوستان کیلئے کئی لڑائی لڑی ۔ دوسرے عالمی جنگ میں بھی ساتھ لڑے ، لیکن 24 سال بعد 1971 کی جنگ میں آمنے سامنے تھے اور اس جنگ میں پاکستان کو سرینڈر کرنا پڑا تھا ۔ اس وقت ادریس اسسٹنٹ ائیر چیف کے عہدہ پر تھے ۔ مگ 23 اور بعد میں مگ 25 کو انڈین ائیر فورس کے بیڑے میں شامل کرانے میں بھی ان کا اہم رول رہا تھا ۔
      First published: