ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ساڑھے آٹھ سو سال کی تاریخ میں پہلی مرتبہ اس شاہی عیدگاہ میں نہیں ہوئی عیدالفطر کی نماز

جانکاروں کے مطابق ایسا تو 1987 کے میرٹھ فسادات میں کرفیو کے دوران بھی نہیں ہوا تھا کہ عیدگاہ میں عید کی نماز ادا نہ کی گئی ہو۔

  • Share this:
ساڑھے آٹھ سو سال کی تاریخ میں پہلی مرتبہ اس شاہی عیدگاہ میں نہیں ہوئی عیدالفطر کی نماز
ساڑھے آٹھ سو سال کی تاریخ میں پہلی مرتبہ اس شاہی عیدگاہ میں نہیں ہوئی عیدالفطر کی نماز

میرٹھ ۔ ساڑھے آٹھ سو سال کی تاریخ میں پہلی مرتبہ عید کے موقع پر میرٹھ کی شاہی عیدگاہ میں نماز کی صفیں بچھائی نہیں گئیں۔ میرٹھ کی شاہی عیدگاہ کی تعمیر بادشاہ قطب الدین ایبک نے کرائی تھی۔ یہ شاہی عیدگاہ اپنی طرز تعمیر کے لحاظ سے بھی خاص اہمیت کی حامل ہے۔ ہندوستان میں ایسی دوسری عیدگاہ نہیں ملتی جس کی اینٹوں پر قرآن کی آیتیں عربی میں لکھی ہیں۔ عیدگاہ کا اندرونی دائرہ اتنا وسیع ہے کہ اندر 131 صفیں بچھ سکتی ہیں اور ایک ساتھ تقریباً  ساٹھ ہزار افراد نماز ادا کر سکتے ہیں لیکن جیسے جیسے شہر کا دائرہ وسیع ہوتا گیا اور لوگوں کی تعداد بڑھتی گئی تو عیدگاہ سے لیکر ایک کلو میٹر کے دائرے میں صفیں بچھنے لگیں اور تقریباً تین سے چار لاکھ لوگ عید الفطر اور عید الاضحٰی کے موقع پر نماز ادا کرنے لگے۔


جانکاروں کے مطابق ایسا تو 1987 کے میرٹھ فسادات میں کرفیو کے دوران بھی نہیں ہوا تھا کہ عیدگاہ میں عید کی نماز ادا نہ کی گئی ہو لیکن عیدگاہ کی قدیم تاریخ میں یہ پہلا موقع ہے کہ شاہی عیدگاہ میں عید الفطر کی نماز ادا نہیں کی جا سکی۔


وہیں لاک ڈاؤن کے سبب شہر کی دیگر مساجد میں بھی چند افراد نے ہی عید کی نماز ادا کی۔ لاک ڈاؤن کے دوران احتیاطی تدابیر پر عمل کرتے ہوئے میرٹھ میں بھی عید الفطر کی نماز جامع مسجد اور شہر کی دیگر مساجد میں چند افراد نے ہی ادا کی۔ اس کے علاوہ لوگوں نے گھروں میں عید الفطر کی نماز ادا کی۔ شہر کی شاہی جامع مسجد میں شہر قاضی اور دِیگر چار افراد نے احتیاطی اقدامات کرتے ہوئی عید کی نماز ادا کی۔ وہیں زیادہ تر لوگوں نے گھروں میں ہی عید الفطر کی نماز ادا کی اور گلے لگ کر مبارکباد دینے کے بجائے دور سے ہی ایک دوسرے کو مبارکباد دی اور شیر خورمہ نوش کیا۔ شہر قاضی نے نماز کے بعد خطبہ دیا اور اس وبا سے نجات کے لیے خصوصی دعا کی گئی۔


 
First published: May 26, 2020 07:40 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading