ہوم » نیوز » No Category

سعودی عرب میں جنرل اسٹور کی بجائے جانور چرانے کا ملا ویزہ ، دو دن بعد ہوئی لطیف کی موت

سیتاپور: روزگار کی تلاش میں سعودی عرب گئےیوپی کے سیتا پور کے ایک شخص کی وہاں مشتبہ حالت میں موت ہو گئی ہے ۔ اس شخص کی لاش کو یہاں لانے میں اس کے خاندان والوں کو کافی جدو جہد کرنی پڑی۔تاہم مقامی ممبر پارلیمنٹ کی کوششیں رنگ لائیں اور ہندوستان کی حکومت نے اپنے خرچے پر اس کی لاش کو یہاں منگوا کر اس کے اہل خانہ کے سپرد کروایا۔ تقریبا دوماہ 20 دن بعد لاش سیتا پور آنے کے بعد سپرد خاک کی گئی ۔

  • ETV
  • Last Updated: Nov 26, 2015 07:39 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
سعودی عرب میں جنرل اسٹور کی  بجائے جانور چرانے کا ملا ویزہ ، دو دن بعد ہوئی لطیف کی موت
سیتاپور: روزگار کی تلاش میں سعودی عرب گئےیوپی کے سیتا پور کے ایک شخص کی وہاں مشتبہ حالت میں موت ہو گئی ہے ۔ اس شخص کی لاش کو یہاں لانے میں اس کے خاندان والوں کو کافی جدو جہد کرنی پڑی۔تاہم مقامی ممبر پارلیمنٹ کی کوششیں رنگ لائیں اور ہندوستان کی حکومت نے اپنے خرچے پر اس کی لاش کو یہاں منگوا کر اس کے اہل خانہ کے سپرد کروایا۔ تقریبا دوماہ 20 دن بعد لاش سیتا پور آنے کے بعد سپرد خاک کی گئی ۔

جمال برنی


سیتاپور: روزگار کی تلاش میں سعودی عرب گئےیوپی کے سیتا پور کے ایک شخص کی وہاں مشتبہ حالت میں موت ہو گئی ہے ۔ اس شخص کی لاش کو یہاں لانے میں اس کے خاندان والوں کو کافی جدو جہد کرنی پڑی۔تاہم مقامی ممبر پارلیمنٹ کی کوششیں رنگ لائیں اور ہندوستان کی حکومت نے اپنے خرچے پر اس کی لاش کو یہاں منگوا کر اس کے اہل خانہ کے سپرد کروایا۔ تقریبا دوماہ 20 دن بعد لاش سیتا پور آنے کے بعد سپرد خاک کی گئی ۔


اترپردیش کے لہر پور کوتوالی علاقہ کے راول ادیسر گاؤں کا یہ واقعہ ہے۔ یہاں کا رہنے والا لطیف ابن نو رالخاں روزگار کی تلاش میں 2 ستمبر کو سعودی عرب گیا تھا۔ اہل خانہ کے مطابق لطیف کو اس کے ممیرےبھائی صدام نے ایک ایجنٹ کے ذریعہ سعودی عرب کا ویزا دلوایا تھا۔


اہل خانہ کے مطابق لطیف جب سعودی عرب پہنچا ، تو وہاں اس کو جنرل اسٹور کی بجائے جانور چرانے کا ویزہ ملا، جس کے بعد اس نے اپنے گھر والوں کو فون کر کےایجنٹ سے بات کرنے اور اپنے ساتھ ہوئے دھوکہ کا ذکر کیا ۔ تیسرے دن ہی یعنی چار ستمبر کو لطیف کی موت ہو گئی ۔ اس کے متعلقین نے ایجنٹ اور سعودی عرب حکومت سے یہاں لاش بھجوانے کی التجا کی ، لیکن نتیجہ صفر نکلا۔


معاملہ جب مقامی ممبر پارلیمنٹ راجیش ورما کے پاس پہنچا ، تو انہوں نے وزارت خارجہ سے رابطہ کر کے لطیف کی لاش کو ہندوستان منگوانے کی کوشش کی اور ان کی کوششیں رنگ لائیں اور مرکزی حکومت نے اپنے خرچ پر لاش کو ہندوستان لانے کا بندوبست کیا ۔


دریں اثنا اہل خانہ نے لطیف موت پر سوالات کھڑتےہوئے اس پورے معاملے میں ایجنٹوں کی کارکردگی کی تفتیش کا مطالبہ کیا ہے ۔

First published: Nov 26, 2015 07:39 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading