ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

غازی آباد کے دیہی وہ شہری مولانا مسلم اکثریتی علاقوں میں ویکسینیشن کو لیکر کیا کہا کہتے ہیں؟

غازی آباد کے ڈاسنا میں بھی ویکسینیشن لگانی چاہئے جو ایک مسلم اکثریتی علاقہ بھی ہے۔ وہاں کی صورتحال کیا کہتی ہے ، کیا زیادہ سے زیادہ ویکسینیشن کروائی جارہی ہے ۔

  • Share this:
غازی آباد کے دیہی وہ شہری مولانا مسلم اکثریتی علاقوں میں ویکسینیشن کو لیکر کیا کہا کہتے ہیں؟
غازی آباد کے ڈاسنا میں بھی ویکسینیشن لگانی چاہئے جو ایک مسلم اکثریتی علاقہ بھی ہے۔ وہاں کی صورتحال کیا کہتی ہے ، کیا زیادہ سے زیادہ ویکسینیشن کروائی جارہی ہے ۔



کورونا وائرس کو دیکھتے ہوئے زیادہ جانچ ہو ہو ویسکینیشن زیادہ ہو اس پر زور دینے کی بات ریاستی حکومت اور انتظامیہ نے بھی کہی ہے۔ غازی آباد کے ڈاسنا میں بھی ویکسینیشن لگانی چاہیئے جو ایک مسلم اکثریتی علاقہ بھی ہے۔ وہاں کی صورتحال کیا کہتی ہے ، کیا زیادہ سے زیادہ ویکسینیشن کروائی جارہی ہے ۔ زبیر علی کا کپنا ہے کہ ہیلتھ جانچ اپ بہت کم ہو رہی ہے۔ صحت مراکز بھی بند ہے! کچھ صحت کی خدمات دیہی علاقوں میں تیزی سے نہیں پہنچ رہی ہیں۔

اس معاملے میں ، ڈاسنا گورنمنٹ اسپتال کے انچارج ڈاکٹر بھرت بھوشن نے کہا کہ دیہی علاقوں میں لوگوں کو آگاہ کرکے ویکسینیشن کا کام کیاجارہا ہے۔ دوسری طرف اگر ہم مسلم علاقوں کے بارے میں بات کریں تو یہ مرکز مسلم اکثریتی علاقے میں ہے۔ ایک برادری کا سوال کیا جائے تو تمام علاقے کے مولانا گرام پردھان وہ انہیں بیدار کر رہے ہیں۔ دھیرے دھیرے لوگ پہنچے بھی لگے ہیں۔ تصویروں میںا ایس ڈی ایم صدر بھی لوگوں کو ویکسینیشن کے بارے میں بتا رہے ہیں۔


غازی آباد کے شہری و دیہی مسجدوں کے امام کا کہنا ہے، ایسا بھرم پھیلایا جا رہا ہے کہ مسلمان ویکسنی نہیں لگوا رہا ہے۔ ایسا نہیں ہے ہم لوگوں کو بیدار کر رہے ہیں۔ ہمارے کئی علماؤں نے ویکسین لگوائی ہے۔ یہ اس وبا سے بچنے کیلئے ہے۔ اک سر میں ہم سب مولانا اپنے اپنے علاقے کے لوگوں کو اس کے بارے میں بتا رہے ہیں۔ ویکسینیشن لگوانے کو لیکر آپ تصویروں میں دیکھ بھی سکتے ہیں مسجدوں میں لاؤڈ اسپیکر سے بتایا جا رہا ہے کہ ویکسینیشن کے بارے میں فون کے ذریعے بھی لوگوں کو بیدار کیا جا رہا ہے۔

Published by: Sana Naeem
First published: Jun 05, 2021 01:56 PM IST