உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    دہلی کے کیلئے کچھ راحت ، گزشتہ 15 دنوں میں پازیٹیویٹی شرح ہوئی آدھی ، 24 گھنٹے میں 12481 معاملات

    دہلی کے کیلئے کچھ راحت ، گزشتہ 15 دنوں میں پازیٹیویٹی شرح ہوئی آدھی ، 24 گھنٹے میں 12481 معاملات

    دہلی کے کیلئے کچھ راحت ، گزشتہ 15 دنوں میں پازیٹیویٹی شرح ہوئی آدھی ، 24 گھنٹے میں 12481 معاملات

    راجدھانی میں پازیٹیویٹی شرح 17.76  فیصد پر آگئی ہے ۔ 14 اپریل کے بعد اب تک کی سب سے کم شرح ہے ۔ وہیں ایک دن میں 347 افراد نے کورونا کی وجہ سے دم توڑا ہے ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : کورونا کا قہر جھییل رہی قومی راجدھانی دہلی کیلے کچھ راحت کی خبر ہے ۔ گزشتہ پندرہ دنوں کے اعداد و شمار پر غور کیا جائے تو راجدھانی میں پازیٹیویٹی شرح کم ہو کر 17.76  فیصد ہوگئی ہے ، جو آھی رہ گئی ہے ۔ یہ اعداد و شمار 14 اپریل کے بعد سب سے کم ہیں ۔ وہیں گزشتہ 24 گھنٹوں میں 12481 نئے معاملات سامنے آئے ہیں ۔ یہ بھی 12 اپریل کے بعد سب سے کم ہیں ۔ حالانکہ ایک دن میں 347 لوگوں نے اس بیماری کی وجہ سے توڑ دیا ہے ۔ اموات کی تعداد میں ابھی بھی کمی نظر نہیں آرہی ہیں ۔ ایک دن پہلے کی بات کریں تو اس کے مقابلہ میں 28 زیادہ افراد نے دم توڑا تھا ۔ وہیں نئے متاثرین کی بات کی جائے ، تو پیر کے مقابلہ میں منگل کو 170 معاملات کم آئے ہیں ۔

      وہیں دہلی کے وزیر صحت نے کہا کہ راجدھانی میں کورونا کے معاملات میں کمی ضرور آئی ہے ، لیکن ابھی یہ پوری طرح سے قابو میں نہیں ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ راجدھانی میں صرف تین سے چار دن کی ہی ویکسین بچی ہے ۔ جین نے کہا کہ ویکسین نہیں مل پا رہی ہے ۔ ویکسین مل جائے تو سبھی کو ویکسین لگا دی جائے گی ۔ ویکسینیشن کیلئے دہلی سرکار نے بڑے انتظامات بھی کئے ہیں ، لیکن کمپنیوں سے ملنے والی ویکسین کی تقسیم کو لے کر مرکزی حکومت کا کنٹرول ہے ۔ فی الحال ویکسین ملنے میں پریشانی پیش آرہی ہے ۔

      اس پر بی جے پی نے کیجریوال سراکار پر سوالات کھڑے کئے ہیں ۔ بی جے پی ممبر پارلیمنٹ میناکشی لیکھی نے کہا کہ دہلی کی کل تعداد ڈھائی کروڑ ہے ، ایسی ریاستیں ہیں جن کی تعداد 25 کروڑ تک ہے تو ان کو ہی ساری ویکسین کیوں دے دی جائے ۔ یہ کوئی خاص ہیں کیا ، جس حساب سے ویکسین تقسیم کی جارہی ہے ، اسی طرح سے تقسیم ہوگی ۔

      گزشتہ کچھ دنوں سے معاملات میں آئی کمی پر ستیندر جین نے کہا کہ دہلی میں کورونا کے معاملات اب مسلسل کم ہورہے ہیں ۔ دہلی میں انفیکشن کی شرح بھی مسلسل کم ہورہی ہے ۔ ستیندر جین نے کہا کہ جو معاملات تیزی سے بڑھ رہے تھے ، اب وہ معاملات کم ہونے شروع ہوگئے ہیں ، لیکن ابھی کمفرٹ زون میں نہیں آسکتے ۔

      ستیندر جین نے کہا کہ جب تک انفیکشن کی شرح پانچ فیصد سے نیچے نہیں آجاتی ہے اور کورونا معاملات تین یا چار ہزار سے نیچے نہ درج ہونے لگتے ہیں ، اس وقت تک ہم آرام دہ زون میں نہیں آسکتے ہیں ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: