உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Gorakhnath Temple Attack: مرتضیٰ عباسی لون ولف مشتبہ ملزم، یوپی پولیس نے دیا بیان

    ''گورکھ ناتھ مندر کے احاطے میں زبردستی داخل ہونے کی کوشش کی"

    ''گورکھ ناتھ مندر کے احاطے میں زبردستی داخل ہونے کی کوشش کی"

    نیوز 18 ڈاٹ کام کے مطابق کمار نے کہا کہ گورکھ ناتھ مندر پر عباسی کا حملہ کو آئی ایس آئی ایس کے دہشت گردانہ نظریے سے ترغیب ملی۔ کمار نے مزید کہا کہ اس نے جہادی لٹریچر سے متاثر ہو کر ایک تنہا بھیڑیے کے حملے کو انجام دینے کی کوشش کی جس نے اس طرح کے نظریے کو فروغ دیا۔

    • Share this:
      نیوز 18 ڈاٹ کام کے مطابق گورکھ ناتھ مندر (Gorakhnath temple) پر سکیورٹی اہلکاروں پر حملے کے الزام میں گرفتار مرتضیٰ عباسی (Murtaza Abbasi) نے دو سال قبل داعش کا حلف اٹھایا تھا اور اس کے حامیوں کو یورپی ممالک کے ساتھ ساتھ امریکہ میں مالی امداد فراہم کی تھی۔ اتر پردیش پولیس نے کہا کہ انسداد دہشت گردی اسکواڈ (ATS) نے عباسی سے عسکریت پسند گروپ اور اس کے کارکنوں کے ساتھ تعلق کے بارے میں پوچھ گچھ کی۔

      پرشانت کمار نے ہفتہ کو ایک پریس بات چیت کے دوران یہ بات کہی ہے کہ مذکورہ رپورٹ کے مطابق شری گورکشناتھ مندر کی حفاظت میں تعینات پولیس (لا اینڈ آرڈر) اہلکاروں پر حملہ کرنے کے الزام میں یو پی اے ٹی ایس نے دہشت گرد تنظیم آئی ایس آئی ایس کے کارکنوں، آئی ایس آئی ایس کا حلف لینے اور آئی ایس آئی ایس کے حامیوں کو مالی مدد فراہم کرنے کے سلسلے میں مرتضی سے پوچھ گچھ کی۔

      کمار نے کہا کہ گورکھ ناتھ مندر پر عباسی کا حملہ کو آئی ایس آئی ایس کے دہشت گردانہ نظریے سے ترغیب ملی۔ کمار نے مزید کہا کہ اس نے جہادی لٹریچر سے متاثر ہو کر ایک تنہا بھیڑیے کے حملے کو انجام دینے کی کوشش کی جس نے اس طرح کے نظریے کو فروغ دیا۔

      کمار نے مزید کہا کہ عباسی آئی ایس آئی ایس سے وابستہ لوگوں سے رابطے میں تھا اور 2020 میں اس گروپ سے منسلک تھا۔ وہ سوشل میڈیا کے ذریعے آئی ایس آئی ایس کے پروپیگنڈہ کارکن مہندی مسعود کے ساتھ رابطے میں تھا، اے ڈی جی نے مزید کہا کہ مہندی مسعود کو بنگلور پولیس نے 2014 میں گرفتار کیا تھا۔

      مزید پڑھیں: Jobs in Telangana: تلنگانہ میں 80 ہزار نئی نوکریوں کا اعلان، لیکن پہلے سے وعدہ شدہ اردو کی 558 ملازمتیں ہنوز خالی!

      پولیس کے مطابق عباسی بیرون ملک داعش کے جنگجوؤں اور حامیوں سے مسلسل رابطے میں تھا۔ سال 2013 میں مرتضیٰ نے انصار التوحید دہشت گرد تنظیم کی بیعت (حلف) لی، جو 2014 میں ISIS میں ضم ہو گئی۔ سال 2020 میں مرتضیٰ نے دوبارہ ISIS کا حلف اٹھایا۔ اس نے اپنے بینک کھاتوں سے تقریباً 8.5 لاکھ روپے یورپی ممالک کے ساتھ ساتھ امریکہ میں بھی آئی ایس آئی ایس کے حامیوں کو بھیجے۔

      مزید پڑھیں: TMREIS: تلنگانہ اقلیتی رہائشی اسکول میں داخلوں کی آخری تاریخ 20 اپریل، 9 مئی سے امتحانات

      پولیس نے کہا کہ عباسی نے انٹرنیٹ پر AK-47، کاربائن، میزائل ٹیکنالوجی کے بارے میں مضامین پڑھے اور یہاں تک کہ ایئر رائفل کی مدد سے شوٹنگ کی مشق کی۔

      پولیس نے کہا تھا کہ 3 اپریل کو IIT گریجویٹ عباسی نے گورکھ ناتھ مندر کے احاطے میں زبردستی داخل ہونے کی کوشش کی اور سیکورٹی اہلکاروں پر درانتی سے حملہ کیا، جس سے PAC کے دو کانسٹیبل زخمی ہو گئے۔ وہ جلد ہی دوسرے سیکورٹی عملے کے زیر اثر ہو گیا اور اسے گرفتار کر لیا گیا۔ ملزم کے خلاف سخت غیر قانونی سرگرمیاں (روک تھام) ایکٹ کا مطالبہ کیا گیا ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: