உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    حکومت تین طلاق پر کوئی آرڈیننس نہیں لائے گی: مختار عباس نقوی

    اقلیتی امور کے مرکزی وزیر مختار عباس نقوی۔ فائل فوٹو

    اقلیتی امور کے مرکزی وزیر مختار عباس نقوی۔ فائل فوٹو

    نئی دہلی۔ حکومت نے کہا ہے کہ راجیہ سبھا میں زیر التواء تین طلاق سے متعلق بل کے بارے میں کوئی آرڈیننس لانے کا اس کا ارادہ نہیں ہے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      نئی دہلی۔ حکومت نے کہا ہے کہ راجیہ سبھا میں زیر التواء تین طلاق سے متعلق بل کے بارے میں کوئی آرڈیننس لانے کا اس کا ارادہ نہیں ہے۔ اقلیتی امور کے مرکزی وزیر مختار عباس نقوی نے یہاں نامہ نگاروں سے غیر رسمی بات چیت میں بتایا کہ حکومت تین طلاق پر کسی بھی قسم کی آرڈیننس پر غور نہیں کر رہی ہے۔ مسٹر نقوی نے امید ظاہر کی کہ پارلیمنٹ کے بجٹ سیشن میں یہ بل راجیہ سبھا سے بھی منظور ہوجائے گا۔


      مسلم خواتین (شادی کے حقوق کے تحفظ ) بل 2017 کو موسم سرما کے سیشن میں لوک سبھا سے منظور ہو گیا ہے اور راجیہ سبھا میں اپوزیشن کی رکاوٹ کی وجہ سے یہ بل منظور نہیں ہوا۔ جب مسٹر نقوی سے پوچھا گیا کہ کیا حکومت مسلم خواتین کو انصاف فراہم کرنے کے لئے آرڈیننس لا سکتی ہے تو انہوں نے کہا کہ حکومت کا اس طرح کا کوئی ارادہ نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت چاہتی ہے کہ بلوں پر غور، بحث، اور پارلیمنٹ میں فیصلہ یعنی اسے پاس کیا جائے ۔


      ایک دیگر سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ بی جے پی کا ترقیاتی مسودہ ووٹ کا مسودہ نہیں ہے۔

      First published: