உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کشمیر کی آزادی کا مطالبہ کرنے والے پاکستان چلے جائیں: گورنر ستیہ پال ملک

    جموں وکشمیر کے گورنرستیہ پال ملک: فائل فوٹو

    جموں وکشمیر کے گورنرستیہ پال ملک: فائل فوٹو

    جموں وکشمیر کے گورنر ستیہ پال ملک نے کہا کہ کشمیر کی آزادی کا مطالبہ کرنے والے پاکستان چلے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر کا مسئلہ ماضی میں دلی میں بیٹھے کچھ سیاستدانوں کی بے ایمانیوں اور سازشوں سے پیدا ہوا ہے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      جموں وکشمیر کے گورنر ستیہ پال ملک نے کہا کہ کشمیر کی آزادی کا مطالبہ کرنے والے پاکستان چلے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی اہلیان وادی کشمیر کو بھارتی آئین کے تحت کچھ بھی دینے کے لئے تیار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر کا مسئلہ ماضی میں دلی میں بیٹھے کچھ سیاستدانوں کی بے ایمانیوں اور سازشوں سے پیدا ہوا ہے۔
      گورنر نے یہ باتیں جمعرات کو یہاں جوڑیاں اکھنور میں منعقدہ کسان میلے سے خطاب کرتے ہوئے کہیں۔ انہوں نے کہا 'بھارتی آئین کے تحت کشمیر کے لوگ جو مانگیں گے ، وزیر اعظم مودی سب دینے کے لئے تیار ہیں۔ کشمیر اور جموں کے لئے ان کے دل میں بہت محبت ہے۔ کشمیر میں سیلاب آیا تو فوج نے لوگوں کو بچایا۔ لوگ جہلم کے کناروں پر بیٹھ کر انڈین آرمی زندہ باد کے نعرے لگارہے تھے۔ اب چاہتے ہو کہ ان کو پتھر سے مارا جائے۔ اس کو بدلو۔ اس سوچ کو بدلو'۔
      انہوں نے کہا 'کشمیر کا مسئلہ ماضی میں ایک تو دہلی میں بیٹھے کچھ سیاستدانوں کی وجہ سے پیدا ہوا۔ انہوں نے بے ایمانیاں اور سازشیں کیں۔ اور یہاں کے کچھ سیاستدان ابھی بھی اسی راستے پر چل رہے ہیں۔ وہ دلی میں کچھ بولتے ہیں اور سری نگر میں کچھ اور بولتے ہیں۔ وہ لوگوں کو خواب بیچتے ہیں۔ کبھی آزادی کا خواب بیچتے ہیں۔ کہاں سے آزادی ملے گی۔ آزادی چاہئے تو سرحد کی دوسری طرف چلے جاﺅ۔ یہ (کشمیر) تو یہیں رہے گا'۔
      First published: