உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پاکستانی فنکار ملک کی جاسوسی کرسکتے ہیں : رام رحیم

     ڈیرہ سچا سودا کے گرو رام رحیم نے آج کہا کہ ہندوستان میں کام کرنے والے پاکستانی فنکار پاکستان کے جاسوس بھی ہو سکتے ہیں، اس لئے ان کے یہاں آنے پر پابندی لگائی جانی نا چاہیے۔

    ڈیرہ سچا سودا کے گرو رام رحیم نے آج کہا کہ ہندوستان میں کام کرنے والے پاکستانی فنکار پاکستان کے جاسوس بھی ہو سکتے ہیں، اس لئے ان کے یہاں آنے پر پابندی لگائی جانی نا چاہیے۔

    ڈیرہ سچا سودا کے گرو رام رحیم نے آج کہا کہ ہندوستان میں کام کرنے والے پاکستانی فنکار پاکستان کے جاسوس بھی ہو سکتے ہیں، اس لئے ان کے یہاں آنے پر پابندی لگائی جانی نا چاہیے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی : ڈیرہ سچا سودا کے گرو رام رحیم نے آج کہا کہ ہندوستان میں کام کرنے والے پاکستانی فنکار پاکستان کے جاسوس بھی ہو سکتے ہیں، اس لئے ان کے یہاں آنے پر پابندی لگائی جانی نا چاہیے۔ آئندہ جمعہ کو ریلیز ہو نے والی فلم 'ایم ایس جی دی واریئر: لاین ہارٹ کی تشہیر کے لیے یہاں پہنچنے پر گرو رام رحیم نے کہاکہ پاکستان ہمارا پڑوسي ملک ہے لیکن اس نے ہندوستان کو ہمیشہ دھوکہ دیا ہے اور یہ بھی ہو سکتا ہے کہ پاکستانی آرٹسٹ یہاں ہمارے ملک کی جاسوسی کر رہے ہوں۔ پاکستانی فنکاروں پر انحصار کرنا ٹھیک نہیں ہے۔
      انهوےنے کہاکہ دہشت گردوں کو پناہ دینے والے ملک کے فنکاروں پر ہم کس طرح اعتماد کر سکتے ہیں، مجھے لگتا ہے کہ پاکستانی فنکاروں کو اپنے ہی ملک میں فلمیں کرنی چاہئے۔ اگر پاکستانی فنکاروں کو اداکاری ہی کرنا ہے تو وہ یہاں کرے یا پاکستان میں کرے کیا فرق پڑتا ہے۔ مذہبی گرو سے اداکار بننے والے ڈاکٹر رام رحیم نے کہا کہ اڑي میں جس طرح پاکستان کے دہشت گردوں نے فوج کے کیمپ پر حملہ کیا اس کے بعد بھی اگر کوئی پاکستان کے فنکاروں کی حمایت کرتا ہے تو یہ بدقسمتی کی بات ہے۔
      ایم ایس جی سیریل کی تیسری فلم 'ایم ایس جی دی واریئر: لاین ہارٹ کے بارے میں ڈاکٹر رام رحیم نے کہا کہ یہ فلم 300 سال پرانے راجپوت کی کہانی پر مبنی ہے ، جو خواتین اور دھرتی ماں کی عزت بچانے کے لئے ' ایلیئنس سے لڑتا ہے۔ اس فلم میں وہ ایک ساتھ تین کرداروں میں نظر آئیں گے۔ فلم کی ہدایت کاری ان کی بیٹی هني پريت انسا نے کی ہے۔
      First published: