உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اقلیتی امور کی وزارت کو حج انتظامات کی منتقلی

    اقلیتی امور کی وزارت کی جانب سے جاری ایک پریس نوٹ میں کہا گیا ہے کہ حج کمیٹی ایکٹ 2002 اور اس کے تحت تشکیل کردہ قواعد کے تحت ، حج انتظامات سمیت ، فریِضہ حج کے جملہ انتظامات سے متعلق تمام تر امور ، اب وزارت خارجہ کے بجائے اقلیتی امور کی وزارت کو منتقل کردیئے گئے ہیں

    اقلیتی امور کی وزارت کی جانب سے جاری ایک پریس نوٹ میں کہا گیا ہے کہ حج کمیٹی ایکٹ 2002 اور اس کے تحت تشکیل کردہ قواعد کے تحت ، حج انتظامات سمیت ، فریِضہ حج کے جملہ انتظامات سے متعلق تمام تر امور ، اب وزارت خارجہ کے بجائے اقلیتی امور کی وزارت کو منتقل کردیئے گئے ہیں

    اقلیتی امور کی وزارت کی جانب سے جاری ایک پریس نوٹ میں کہا گیا ہے کہ حج کمیٹی ایکٹ 2002 اور اس کے تحت تشکیل کردہ قواعد کے تحت ، حج انتظامات سمیت ، فریِضہ حج کے جملہ انتظامات سے متعلق تمام تر امور ، اب وزارت خارجہ کے بجائے اقلیتی امور کی وزارت کو منتقل کردیئے گئے ہیں

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی : اقلیتی امور کی وزارت کی جانب سے جاری ایک پریس نوٹ میں کہا گیا ہے کہ حج کمیٹی ایکٹ 2002 اور اس کے تحت تشکیل کردہ قواعد کے تحت ، حج انتظامات سمیت ، فریِضہ حج کے جملہ انتظامات سے متعلق تمام تر امور ، اب وزارت خارجہ کے بجائے اقلیتی امور کی وزارت کو منتقل کردیئے گئے ہیں ۔ اقلیتی امور کی وزارت نے یکم اکتوبر 2016 سے وزارت خارجہ کے حج ڈویژن کا کام اپنے ذمہ لے لیا ہے۔
      حج ایک از حد پیچیدہ انتظامی ذمہ داری ہے جو حکومت ہند بھارت کی سرحد وں سے باہر بہ حسن خوبی اٹھاتی رہی ہے۔ دنیا بھر سے حج کے لئے آنے والے عازمین حج کی مجموعی تعداد میں بھارتی عازمین حج کی تعداد لگ بھگ ایک تہائی کے قریب ہوتی ہے۔ 2013 سے تقریباً ایک لاکھ 36 ہزار عازمین حج ہر سال حج کرنے کی غرض سے سعودی عرب جاتے ہیں۔
      اس پورے سلسلے کی پیچیدگی اور جغرافیائی وسعت کے پیش نظر ، کامیاب حج انتظامات کے لئے مختلف وزارتوں اور ایجنسیوں کے ساتھ رابطہ قائم کرکے از حد ماہرانہ منصوبہ بندی اور قریبی تال میل درکار ہوتا ہے ۔اس لحاظ سے یہ از حد طویل انتظامی عمل کہا جاسکتا ہے۔
      حج انتظامات کے سلسلے میں وزارت خارجہ ، شہری ہوا بازی کی وزارت ، وزارت صحت ، قونصلیٹ جنرل آف انڈیا ، جدہ (سی جی آئی) ، ہندستان کی حج کمیٹی اور ریاستی / مرکزی انتظام کے علاقوں کی حج کمیٹیوں کی مشترکہ و جامع کوششیں شامل ہوتی ہیں۔
      سعودی عرب میں حج کمیٹی کے توسط سے جانے والے عازمین حج کے لئے درکار انتظامات کے تمام تر پہلو ؤں کے سلسلے میں قونصلیٹ جنرل آف انڈیا(سی جی آئی) جدہ ، تال میل پیدا کرتا ہے اور یہ سارا عمل ریاض میں مقیم بھارت کے سفیر کی کلی نگرانی میں انجام پاتا ہے۔ بھارت میں ، حج کمیٹی آف انڈیا ،جس کی تشکیل حج کمیٹی ایکٹ 2002 کے تحت عمل میں آئی ہے، حج سے متعلق تمام تر انتظامات کی ذمہ دار ہوتی ہے۔
      حج سے متعلق تمام تر کام کاج کو ،خارجی امور کی وزارت سے لیکر اقلیتی امور کی وزارت کو سونپے جانے کے بعد ، اب اقلیتی امور کی وزارت ،سفر حج سے متعلق تمام تر معاملات کے لئے ،کلیدی یا نوڈل وزارت ہوگی۔
      First published: