உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جمعے کی نماز کیلئے سکھ سماج آیا آگے، کھلے میں نماز پڑھے جانے کے تنازعہ میں پاکستان کی انٹری، بیان جاری کر ظاہر کیا اعتراض

    اب مقامی لوگوں نے انسانیت کی نئی مثال قائم کرتے ہوئے بتایا ہے کہ بھائی چارہ کیسے برقرار رکھا جائے اور اس کے لیے کوششیں بھی جاری ہیں۔ شری گرو سنگھ سبھا گروگرام نے تمام مسلمان بھائیوں سے گرودواروں میں نماز ادا کرنے کی اپیل کرکے ایک مثال قائم کی ہے

    اب مقامی لوگوں نے انسانیت کی نئی مثال قائم کرتے ہوئے بتایا ہے کہ بھائی چارہ کیسے برقرار رکھا جائے اور اس کے لیے کوششیں بھی جاری ہیں۔ شری گرو سنگھ سبھا گروگرام نے تمام مسلمان بھائیوں سے گرودواروں میں نماز ادا کرنے کی اپیل کرکے ایک مثال قائم کی ہے

    اب مقامی لوگوں نے انسانیت کی نئی مثال قائم کرتے ہوئے بتایا ہے کہ بھائی چارہ کیسے برقرار رکھا جائے اور اس کے لیے کوششیں بھی جاری ہیں۔ شری گرو سنگھ سبھا گروگرام نے تمام مسلمان بھائیوں سے گرودواروں میں نماز ادا کرنے کی اپیل کرکے ایک مثال قائم کی ہے

    • Share this:
      نئی دہلی: ہریانہ میں کھلے میں نماز پڑھنے کے تنازع میں پاکستان کی انٹری ہوگئی ہے۔ دراصل پاکستان کی وزارت خارجہ نے اس معاملے پر ایک بیان جاری کیا ہے اور گروگرام میں نماز سے متعلق معاملے پر اعتراض ظاہر کیا ہے۔ خیال رہے کہ پاکستان اپنے یہاں اقلیتوں کے حقوق کو مسلسل نظر انداز کر رہا ہے اور ہندستان  کے اندرونی معاملات میں مداخلت کر رہا ہے۔ آپ کو بتا دیں کہ گروگرام میں اقلیتی برادری کی طرف سے کھلے میں نماز پڑھنے کو لے کر پچھلے کئی مہینوں سے تنازعہ چل رہا ہے لیکن اس معاملے میں اب مقامی لوگوں نے انسانیت کی نئی مثال قائم کرتے ہوئے بتایا ہے کہ بھائی چارہ کیسے برقرار رکھا جائے اور اس کے لیے کوششیں بھی جاری ہیں۔ شری گرو سنگھ سبھا گروگرام نے تمام مسلمان بھائیوں سے گرودواروں میں نماز ادا کرنے کی اپیل کرکے ایک مثال قائم کی ہے۔
      شری گرو سنگھ سبھا نے گرپورب سے پہلے اپیل کی اور کہا کہ اگر مسلمان بھائی چاہیں تو کووڈ قوانین کے تحت ہمارے گرودواروں میں جمعہ کی نماز پڑھ سکتے ہیں۔ شری گرو سنگھ سبھا کے صدر شیرگل سدھو نے کہا کہ یہ ہماری پہل، پہلی کوشش نہیں۔ اس سے پہلے بھی امرتسر کے ہرمندر صاحب گرودوارے میں بھی نماز ادا کی جاتی رہی ہے۔
      غور طلب ہے کہ اس سے قبل سیکٹر 12 کے رہنے والے اکشے یادو نے اس معاملے میں پہل کرتے ہوئے گزشتہ جمعہ کو اپنی دکانوں میں نماز پڑھنے کی جگہ کی بلکہ کہا کہ اگر جگہ کم پڑے گی تو ان کے گھر میں موجود میں پارکنگ اور پارک میں  نماز ادا کی جا سکے ایسی سہولت کیلئے بھی وہ  تیار ہیں۔

      وہیں اس معاملے میں شیرگل سدھو کی مانیں تو تو ہمارے پہلے گرو پہلی پاشاہی نے ہمیں سکھایا ہے کہ انسانیت کی خدمت خدا کی خدمت ہے۔ اور اس پر یقین رکھتے ہوئے ہماری کمیونٹی انسانیت کی خدمت میں مصروف ہے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: