ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ہندوجا بردرس میں ایک خط کو لے کر تنازعہ، 83 ہزار کروڑ روپئے کا ہے معاملہ

بتا دیں کہ ہندوجا گروپ دنیا کے سب سے امیر لوگوں میں شامل ہے۔ ان کا کاروبار تقریبا سو سال سے بھی پہلے سے چلا آ رہا ہے۔

  • Share this:
ہندوجا بردرس میں ایک خط کو لے کر تنازعہ، 83 ہزار کروڑ روپئے کا ہے معاملہ
ہندوجا بردرس میں ایک خط کو لے کر تنازعہ، 83 ہزار کروڑ روپئے کا ہے معاملہ

نئی دہلی۔ ہندوجا گروپ کے مالک ہندوجا بھائیوں (Hinduja brothers) کے درمیان ان دنوں ایک خط کو لے کر تنازعہ چل رہا ہے۔ دراصل، اس خط نے ہندوجا کنبے کی 11.2 ارب ڈالر ( تقریبا 83 ہزار کروڑ روپئے) کی املاک کو لے کر قانونی تنازعہ کھڑا کر دیا ہے۔ سال 2014 میں لکھے گئے اس خط میں چاروں بھائیوں کے دستخط ہیں۔ یہ خط کہتا ہے کہ ایک بھائی کے پاس جو بھی دولت ہے، وہ سبھی کا ہے۔ اب 84 سال کے شری چند ہندوجا اور ان کی بیٹی ونو چاہتے ہیں کہ اس خط کو مسترد کر اسے بیکار قرار دیا جائے۔


ہندوجا گروپ میں چار بھائی ہین۔ ان میں لندن رہائشی شری چند ہندوجا (Srichand Hinduja) اور گوپی چند ہندوجا دنیا بھر میں ہندوجا گروپ کے تحت تیل و گیس، بینکنگ، آئی ٹی و پراپرٹی کا کاروبار کرتے ہیں۔ تیسرے بھائی پرکاش ہندوجا سوئٹرزلینڈ کے جنیوا میں فائنانس کا کاروبار سنبھالتے ہیں۔ چوتھے بھائی اشوک ہندوجا ہندستان میں گروپ کے کاروبار کی ذمہ داری سنبھال رہے ہیں۔


خط کا یہ معاملہ منگل کو لندن کی ایک عدالت مین سماعت کے بعد سامنے آیا ہے۔ اس میں جج نے کہا کہ باقی کے تین بھائی گوپی چند، پرکاش اور اشوک نے خط کا استعمال ہندوجا بینک پر اپنا کنٹرول حاصل کرنے کے لئے کیا، جبکہ اس پر شری چند ہندوجا کا پورا حق ہے۔


این ڈی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق، جج نے کہا کہ شری چند اور ونو چاہتے ہیں کہ عدالت یہ فیصلہ سنائے کہ اس خط کا کوئی قانونی اثر نہیں ہو گا۔ ایسے میں اس خط کو وصیت کی طرح استعمال نہیں کیا جا سکتا۔ رپورٹ کے مطابق، تینوں بھائیوں نے ایک بیان میں کہا کہ اس معاملہ میں آگے سماعت ہوئی تو یہ کنبے کے اصولوں کے خلاف جائے گا۔ ان کا کہنا ہے کہ دہائیوں سے کنبے میں یہی سسٹم رہا ہے کہ سب کچھ ہر کسی کا ہے۔ کچھ بھی کسی ایک کا نہیں ہے۔ رپورٹ کے مطابق، تینوں بھائیوں نے ایک ای میل میں کہا ہے کہ ہم اپنے کنبے کے اس اصول کو بچانا چاہ رہے ہیں۔ حالانکہ، اس ای میل پر ابھی تک شری چند ہندوجا کے وکیل نے کوئی ردعمل ظاہر نہیں کیا ہے۔

بتا دیں کہ ہندوجا گروپ دنیا کے سب سے امیر لوگوں میں شامل ہے۔ ان کا کاروبار تقریبا سو سال سے بھی پہلے سے چلا آ رہا ہے۔ فائنانس، میڈیا اور ہیلتھ کئیر بزنس میں 40 سے بھی زیادہ ملکوں میں ہندوجا گروپ کے کاروبار ہیں۔
First published: Jun 25, 2020 12:50 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading