உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    حق اطلاعات ایکٹ کا پر کترنے کی تیاری ؟ وزیرداخلہ نے کہا : سرکاری معلومات کے دائرے پر ہو بحث

    وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے کہا ہے کہ حق اطلاعات ایکٹ کے تحت سرکاری معلومات دینے کی حد پر بحث کی جانی چاہئے ۔

    وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے کہا ہے کہ حق اطلاعات ایکٹ کے تحت سرکاری معلومات دینے کی حد پر بحث کی جانی چاہئے ۔

    وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے کہا ہے کہ حق اطلاعات ایکٹ کے تحت سرکاری معلومات دینے کی حد پر بحث کی جانی چاہئے ۔

    • Pradesh18
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی : وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے کہا ہے کہ حق اطلاعات ایکٹ کے تحت سرکاری معلومات دینے کی حد پر بحث کی جانی چاہئے ۔مرکزی انفارمیشن کمیشن کی سالانہ کانفرنس میں وزیر داخلہ کے مطابق اگر ایلین حملہ کر دے ، تو ایسے حالات سے نمٹنے کے لئے کیا تیاری ہونی چاہئے؟ آر ٹی آئی کے تحت ایسی اطلاعات حکومت سے مانگی جاتی ہیں، اگرچہ ہمارے محکمہ نے اس کا جواب دینے کی کوشش کی ہے ، لیکن معلومات لینے کے ایسی کوشش سے بچنا چاہئے، اس لئے حکومت کے اطلاع دینے کی حد کیا ہو، اس پر بحث کی جانی چاہئے۔
      وزیر داخلہ کا کہنا ہے کہ گورننس میں عوام کی شراکت ہو، اسی لئے آر ٹی آئی بے حد ضروری ہے۔ آر ٹی آئی کے ذریعہ حکومت کی جوابدہی بنتی ہے ، جس کا حکومت اور اس کے شہریوں کو فائدہ مل رہا ہے۔ جی ایس ٹی پر 40 ہزار سے زیادہ تجویز سرکاری ویب سائٹ پر ملیں ، جو بے مثال تھا۔ اس سے ثابت ہو گیا کہ سرکاری پالیسیوں میں عوام کی شراکت ہے اور یہ مسلسل ہونی چاہئے۔ اس کے علاوہ سرکاری کام زیادہ سے زیادہ آن لائن ہونا چاہئے۔
      حکومت کا خیال ہے کہ شہریوں کو اپنی بات حکومت کے دروازے پر جاکر کہنے کی ضرورت نہیں ہو گی، یہ بات شفافیت کے ذریعے دور کی جا رہی ہے۔ ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ مرکزی انفارمیشن کمیشن سماعت کرے اور گزشتہ سال 11 ہزار مقدمات میں اس طریقہ کی سماعت ہوتی بھی رہی ہے۔ حکومت نے یہ بھی صاف کیا کہ معلومات کوئی مانگتا ہے ، تو حکومت گھبراتی نہیں ہے، مگر کچھ افسروں کو دقت ضرور ہوتی ہے۔ ابھی تک اس حکومت کے اب تک کے دور میں کرپشن کا کوئی الزام نہیں ہے، اسی لئے چھپانے کے لیے حکومت کے پاس کچھ نہیں ہے، سب کچھ سب کے سامنے ہے۔
      آر ٹی آئی کے نافذ ہونے کے 11 سال پورے ہونے پر مرکزی وزیر جتیندر سنگھ نے کہا کہ حکومت ہر وقت صحیح طریقہ سے اطلاع دینے کے لیے تیار رہتی ہے۔
      ماہرین کا کہنا ہے کہ راجناتھ سنگھ کا یہ بیان حق اطلاعات ایکٹ کے پر کترے جانے کی طرف ایک اشارہ ہے۔ کیونکہ کئی مواقع پر حکومت نے وزیر اعظم مودی سے متعلق سوالوں کا جواب دینے سے انکار کرچکی ہے۔
      First published: