ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ہم نے جوانوں کے ہاتھ نہیں باندھے، پاکستان حملہ کرے گا، توسخت جواب دیں گے: راجناتھ سنگھ

وزیرداخلہ راجناتھ سنگھ نے کہا ہے کہ انہوں نے جوانوں کے ہاتھ نہیں باندھے ہیں اور دہشت گردانہ واقعات ہوں گے تو جوان منہ توڑ جواب دینے کے لئے تیار ہیں۔

  • Share this:
ہم نے جوانوں کے ہاتھ نہیں باندھے، پاکستان حملہ کرے گا، توسخت جواب دیں گے: راجناتھ سنگھ
مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ، پی ٹی آئی، فائل فوٹو

نئی دہلی: وزیرداخلہ راجناتھ سنگھ نے کہا ہے کہ انہوں نے جوانوں کے ہاتھ نہیں باندھے ہیں۔ اگر ہم نے سیز فائر کا اعلان کیا ہے، اس کے باوجود  دہشت گردانہ واقعات ہوں گے تو جوان ان کو منہ توڑ جواب دینے کے لئے تیار ہیں۔ اس کے تحت انہوں نے سب سے پہلے فوج کے سابق سربراہ دلبیر سنگھ سہاگ اور آئینی ماہر سبھاش کشیپ سے ملاقات کی۔


راجناتھ سنگھ نے کہا کہ ہم نے رمضان کو دیکھتے ہوئے سرحد پر آپریشن بند رکھے ہیں، لیکن ہم نے یہ واضح طور پر کہا ہے کہ اس دوران اگر دہشت گردانہ واقعات ہوتے ہیں تو ہم اپنا آپریشن دوبارہ شروع کریں گے۔ ہم نے اپنے جوانوں کے ہاتھ نہیں باندھ رکھے ہیں۔ حملہ ہوا تو ہمارے جوانوں نے 5 دہشت گردوں کو مار گرایا ہے۔


غور طلب ہے کہ رمضان کے مہینہ میں امن قائم رکھنے کیلئے 16 مئی کو وزارت داخلہ نے ٹویٹ کرکے فوجی کارروائی پر لوگ لگادی تھی۔ وزارت داخلہ کی جانب سے کہا گیا تھا کہ رمضان کے مہینے میں فوج اپنی طرف سے کارروائی نہیں کرے گی ، لیکن اگر کوئی حملہ ہوتا ہے تو فوج اپنی یا بے گناہ شہریوں کی حفاظت کیلئے جوابی کارروائی کرسکتی ہے۔




جموں و کشمیر کے ڈی جی پی ایس پی وید کے مطابق سیز فائر کے بعد سے 17 سے 20 مئی کے درمیان سنگ باری کے صرف 6 واقعات پیش آئے ہیں۔ انہوں نے ٹویٹ کیا کہ وزیر اعظم مودی کی اس پہل نے لا اینڈ آرڈر کو برقرار رکھنے میں مدد کی ہے۔ خاص طور پر جنوبی کشمیر میں حالات بہتر ہوئے ہیں، جو کنبے اپنے بچوں کو گھر واپس بلانا چاہتے ہیں ، ان میں بھی یہ اعتماد میں اضافہ کرنے کا کام کررہا ہے۔

دوسری جانب پی ڈی پی لیڈر وحید پارہ کا کہنا ہے کہ سیز فائر کی وجہ سے امن کا ماحول ہے ۔ سبھی جگہوں پر امن ہے ، اگر مرکزی حکومت اس کی مدت میں توسیع کرتی ہے تو یہ قابل استقبال قدم ہے۔
First published: May 29, 2018 05:22 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading