ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

نوجوان بندوق کا راستہ ترک کرکے بدلتے کشمیر کا حصہ بنیں: ایچ ایس ساہی

اب مقامی نوجوانوں کو بھی اب سمجھ آگیا ہے کہ دہشت گردی ایک غلط راستہ ہے اس لئے آہستہ آہستہ دہشت گردی اب دم توڑ رہی ہے کیونکہ اب کشمیر بدل رہا ہے اور کشمیری نوجوانوں اب بدلتے کشمیر کا حصہ بن رہے ہیں جس کا ثبوت نوجوانوں نے ڈی ڈی سی الیکشن میں دکھایا کیونکہ نوجوانوں اب کی بار بنا کسی ڈر اور خوف کے کھل کر الیکشن میں حصہ لیا۔

  • Share this:
نوجوان بندوق کا راستہ ترک کرکے بدلتے کشمیر کا حصہ بنیں: ایچ ایس ساہی
فوج کے جنرل افسر کمانڈنگ شمالی کشمیر ایچ ایس ساہی

فوج کے جنرل افسر کمانڈنگ شمالی کشمیر ایچ ایس ساہی نے کشمیری نوجوانوں کو بندوق کا راستہ ترک کرنے اور پاکستان کے پروپیگنڈے کے بجائے مین اسٹریم میں شامل ہوکر بدلتے کشمیر کا حصہ بنیں۔ ساہی نے کہا کہ کچھ نوجوان پاکستان کے گمراہ کن راستے میں آکر راستہ بھٹک جاتے ہیں لیکن آہستہ آہستہ نوجوان پاکستان کے گمراہ کن راستہ کو خیر باد کہہ رہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ تین سو سے زیادہ ملیٹنٹ لاچنگ پیڑ پر اس پار آنے کی تاک میں ہیں لیکن پاکستان کے کسی بھی منصوبہ کو کامیاب بنانے نہیں دیا جائے گا۔ کشمیر میں دہشت گردی میں کمی آئی ہے کیونکہ اب فوج سرحدوں پر چوکنا ہے، اس لئے دہشت گرد کو اس طرف آنے میں مشکلات آرہے ہیں۔

اب مقامی نوجوانوں کو بھی اب سمجھ آگیا ہے کہ دہشت گردی ایک غلط راستہ ہے اس لئے آہستہ آہستہ دہشت گردی اب دم توڑ رہی ہے کیونکہ اب کشمیر بدل رہا ہے اور کشمیری نوجوانوں اب بدلتے کشمیر کا حصہ بن رہے ہیں جس کا ثبوت نوجوانوں نے ڈی ڈی سی الیکشن میں دکھایا کیونکہ نوجوانوں اب کی بار بنا کسی ڈر اور خوف کے کھل کر الیکشن میں حصہ لیا۔


پورے کشمیر میں تقریبا ڈھائی سو کے قریب ملیٹنٹ موجود ہیں اور تین سو کے قریب لاچانک پیڑ پر اس پار آنے کی تاک میں ہیں ۔لیکن سر حدوں پر فوج دہشت گردوں کے کسی بھی منصوبہ کو کامیاب بنانے نہیں دی گے ۔دفعہ تین سو ستر ہٹنے کے بعد دہشت گردی میں کمی آئی ہے کیونکہ ان نچلی سطح پر دہشت گردوں کو سپورٹ نہیں مل پا رہا ہے کیونکہ اب لوگوں کو پتہ چلا ہے کہ دہشت گردی ایک ناکام اور غلط راستہ ہے۔ اس لئے دہشت گردوں کے حوصلے پست ہو گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ فوج اور عوام کے درمیان رشتوں کو مزید مظبوط بنانے کی ضرورت ہے اور اس کیلئے فوج کی طرف کوشش جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ ڈی ڈی سی الیکشن کو پرامن بنانے کیلئے فوج اور فورسز نے مل کر کام کیا اور دہشت گرد اپنے منصوبوں میں ناکام ہوگئے اور نوجوان نے اس مرتبہ الیکشن میں کھل کر حصہ لیا اور کشمیری نوجوان بدلتے کے کشمیر کے ساتھ ساتھ جمہوری جشن کا بڑے پیمانے پر حصہ بنے۔ انہوں نے کہا آنے والے وقت میں فوج نوجوانوں کیلئے خیرسگالی جذبے کے تحت مزید خوش آئند اقدام اٹھائے گئے تاکہ نوجوان دہشت گردوں کے گمراہ کن راستہ کو ترک کریں اور بدلتے کشمیر میں اپنا اہم رول نبھائیں اور اپنا بہتر مستقبل تلاش کریں۔

Published by: sana Naeem
First published: Dec 26, 2020 05:35 PM IST