ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

راجدھانی دہلی میں 18پلس ویکسینیشن مہم بند ہونے کی کگار پر ، اب نائب وزیر اعلی نے کیا یہ مطالبہ

دہلی کے نائب وزیر اعلی منیش سسودیا نے کہا کہ دہلی میں ویکسین کی قلت ہے۔ دہلی میں 18 پلس کے لئے صرف تین دن کی ویکسین باقی ہے۔ اگر مرکزی حکومت 18 سال کی عمر کے لوگوں کو ویکسین فراہم نہیں کرتی ہے ، تو پھر ہم ٹیکے لگانے کے تمام مراکز بند کرنے پر مجبور ہو جائیں گے ۔

  • Share this:
راجدھانی دہلی میں 18پلس ویکسینیشن مہم بند ہونے کی کگار پر ، اب نائب وزیر اعلی نے کیا یہ مطالبہ
راجدھانی دہلی میں 18پلس ویکسینیشن مہم بند ہونے کی کگار پر ، اب نائب وزیر اعلی نے کیا یہ مطالبہ

نئی دہلی : دہلی کے نائب وزیر اعلی منیش سسوڈیا نے پیر کو ایک ڈیجیٹل پریس کانفرنس کے ذریعہ مرکزی حکومت سے دہلی کے لئے ویکسین کی  فراہمی  کا مطالبہ کیا۔  اسی کے ساتھ ہی نائب وزیر اعلی نے یہ بھی مطالبہ کیا کہ وہ ویکسین کی تقسیم کے عمل میں شفافیت لانے کے لئے تمام ریاستوں کو دی گئی ویکسین کا ڈیٹا عام کریں ۔ نائب وزیر اعلی نے کہا کہ دہلی میں ویکسین کی بہت بڑی قلت ہے۔  دہلی میں 18 پلس کے لئے صرف تین دن کی ویکسین باقی ہے۔  اگر مرکزی حکومت 18 سال کی عمر کے لوگوں کو ویکسین فراہم نہیں کرتی ہے ، تو پھر ہم ٹیکے لگانے کے تمام مراکز بند کرنے پر مجبور ہو جائیں گے ۔


مرکزی حکومت کے موصولہ خط کا حوالہ دیتے ہوئے نائب وزیر اعلی نے کہا کہ مرکزی حکومت مئی میں 45 عمر والے افراد کے لئے دہلی کو 3.83 لاکھ ویکسین دے رہی ہے ۔  لیکن 18-44 سال کی عمر کے لوگوں کے لئے کوئی ویکسین دستیاب نہیں ہے۔  ڈپٹی چیف منسٹر نے مرکزی حکومت کے سامنے 3 مطالبات رکھے۔  سب سے پہلے یہ کہ مرکزی حکومت کو چاہئے کہ وہ 18-44 سال کی عمر کے لوگوں یا کم از کم 45 سال کی عمر کے لوگوں کے لئے ویکسین کی مناسب مقدار فراہم کرے۔ اور اتنی ہی ویکسین 18 سے 44 سال کی عمر کے گروپ کے لئے  بھی دستیاب کرائے۔  دہلی حکومت اسے خریدنے کے لئے تیار ہے۔  دوم ہندوستان میں تیار کی جانے والی ویکسینوں کی تعداد اور ریاستوں کو دی جانے والی ویکسین کے اعداد وشمار کو عام کیا جانا چاہئے ۔ تاکہ مختص کرنے کے عمل میں شفافیت لائی جاسکے۔  ریاستوں کو کتنی ویکسین ملی ، یہ جاننے کے لئے سرکاری اسپتالوں اور نجی اسپتالوں کو کتنی ویکسین ملی اس کا عام لوگوں کو پتہ چل سکے۔


تیسرا مرکزی حکومت کو بتانا چاہئے کہ جون اور جولائی کے مہینوں میں دہلی کو کتنی ویکسین ملے گی ۔ تاکہ دہلی حکومت اس کے مطابق  ویکسینیشن کے لئے اقدامات کرسکے ۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے کہا کہ دہلی میں ویکسین پروگرام تیز رفتار سے چلایا جارہا ہے ۔ آج 45 سال کی عمر کے لوگوں کے لئے ویکسین مراکز کو ویکسینیشن کو مزید تیز کرنے کے لئے اسپتالوں سے اسکولوں میں منتقل کردیا گیا ہے۔  اس کے ساتھ ہی واک ان ویکسینیشن کی سہولت بھی شروع کردی گئی ہے۔  اس کا مطلب یہ ہے کہ اب 45 کے لوگوں کو اپنا اندراج کروانے کی ضرورت نہیں ہوگی۔  ان کا رجسٹریشن ویکسین سنٹر میں ہی ہوگا ۔  نیز اسکولوں میں 18-44 سال کی عمر کے لوگوں کو ویکسین دی جارہی ہے ۔  لیکن دہلی میں 18 پلس کے لئے صرف 3 دن کی ویکسین باقی ہے۔  ڈپٹی چیف منسٹر نے کہا کہ مرکزی حکومت سے تعاون کی توقع کی جارہی ہے ۔ تاکہ دہلی میں ویکسینیشن کا پروگرام بند نہ ہو۔


ڈپٹی چیف منسٹر نے کہا کہ کورونا کی دوسری لہر کی رفتار اب کم ہورہی ہے۔  دہلی میں انفیکشن کی شرح کم ہو رہی ہے اور کورونا سے ہونے والی اموات کی تعداد بھی کم ہوئی ہے۔  اس سے اسپتالوں پر دباؤ بھی کم ہوا ہے۔  انہوں نے کہا کہ دہلی حکومت عوام کو ویکسین میں تیزی سے لگارہی ہے ، جتنی ویکسین مرکز دہلی حکومت کو مہیا کررہی ہے وہ استعمال میں لائی جارہی ہے۔  دہلی حکومت کی ترجیحات  ٹیکہ لگانے کے اعداد و شمار جمع کرنا نہیں ہے ، بلکہ دہلی کے ہر شہری کو کورونا کے خطرے سے بچانا ہے۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: May 17, 2021 10:57 PM IST