ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کورنٹائن سینٹرو میں ہوگی سیکڑوں جماعتیوں کی عید، کس وجہ سے ضلع انتظامیہ نے اب تک ان جماعتیوں کو نہیں کیا ڈسچارج

دہلی کے نظام الدین مرکز میں ٹھہرے جماعتیوں کے کورونا پازیٹو ہونے کے معاملے سامنے آنے کے بعد سے ملک کی مختلف ریاستوں میں پہنچی جماعتیں سرکار کے نشانے پر آگئ تھیں اور اس کے بعد جماعتیوں کا کورونا ٹیسٹ بڑے پیمانے پر کیا گیا تھا لیکن ان میں بہت سے جماعتی ایسے تھے جن کا تعلق نظام الدین مرکز سے رہا اور اس بنیاد پر ان جماعتیوں کو مختلف شہروں کے کورنٹائن سنٹروں میں آئسولیٹ کردیا گیا تھا۔

  • Share this:
کورنٹائن سینٹرو میں ہوگی سیکڑوں جماعتیوں کی عید، کس وجہ سے ضلع انتظامیہ نے اب تک ان جماعتیوں کو نہیں کیا ڈسچارج
دہلی کے نظام الدین مرکز میں ٹھہرے جماعتیوں کے کورونا پازیٹو ہونے کے معاملے سامنے آنے کے بعد سے ملک کی مختلف ریاستوں میں پہنچی جماعتیں سرکار کے نشانے پر آگئ تھیں اور اس کے بعد جماعتیوں کا کورونا ٹیسٹ بڑے پیمانے پر کیا گیا تھا لیکن ان میں بہت سے جماعتی ایسے تھے جن کا تعلق نظام الدین مرکز سے رہا اور اس بنیاد پر ان جماعتیوں کو مختلف شہروں کے کورنٹائن سنٹروں میں آئسولیٹ کردیا گیا تھا۔

میرٹھ کے سردھنہ  موانه اور جائی  کے مختلف کوارنٹاین سینٹروں میں گزشتہ 50 دنوں سے کوارنٹاین میں رہ رہے جماعتیوں کو ڈسچارج نہیں کیے جانے کی خبر نیوز 18 اردو پر نشر ہونے کے بعد سماجی اور ملی تنظیموں کے ذمہ داران نے اس معاملے کو لیکر  آج ڈی ایم میرٹھ سے ملاقات کی اور ان جماعتیوں جن میں بڑی تعداد غیر مقامی جماعتیوں کی ہے  ڈسچارج کئے جانے کا مطالبہ کیا ہے لیکن ان افراد کو جلد ڈسچارج کر دیے جانے کا ڈی ایم میرٹھ نے یقین تو دلایا ہے لیکن وقت نہیں بتایا۔ ایسے میں اب ان افراد کو عید سے قبل ڈسچارج کیے جانے کی اُمید نہیں ہے۔


دہلی کے نظام الدین مرکز میں ٹھہرے جماعتیوں کے کورونا پازیٹو ہونے کے معاملے سامنے آنے کے بعد سے ملک کی مختلف ریاستوں میں پہنچی جماعتیں سرکار کے نشانے پر آگئ تھیں اور اس کے بعد جماعتیوں کا کورونا ٹیسٹ بڑے پیمانے پر کیا گیا تھا لیکن ان میں بہت سے جماعتی ایسے  تھے جن کا تعلق نظام الدین مرکز سے رہا اور اس بنیاد پر ان جماعتیوں کو مختلف شہروں کے کورنٹائن سنٹروں  میں آئسولیٹ  کردیا گیا تھا۔


یہ گزشتہ پچاس دنوں سے ان سینٹرو پر کوارنٹین  ہیں لیکن ابھی تک ان کو ڈسچارج نہیں کیا گیا ہے  جبکہ  ان افراد میں کسی کی بھی رپورٹ پہلے بھی پازیٹو  نہیں آئی تھی اور انہوں نے کورنٹائن میں رہنے کی معیاد بھی پوری کر لی ہے۔ میرٹھ میں اکیلے سردھنہ کے جین  انٹرکالج کورنٹائن سینٹر میں تقریباً 90 جماعتیں موجود ہیں جو پچاس دن کا وقت پورا کرنے کے باوجود بھی اپنے گھروں کو لوٹنے کا انتظار کر رہے ہیں۔ لیکن اب تک ضلع انتظامیہ اور محکمہ صحت نے ان کو ڈسچارج کرنے کی کوئی کاروائی نہیں کی ہے۔


ضلع انتظامیہ نے اب تک  ان کو بھیجنے کا کوئی انتظام نہیں کیا ہے اور نہ ہی اب عید سے پہلے ان کے ڈسچارج ہونے کی کوئی اُمید ہے۔
First published: May 22, 2020 10:25 PM IST