உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مظفر نگر : مائیکے بات کرانے کا مطالبہ کیا تو شوہر کردی پٹائی ، تین طلاق کی دھمکی دے کر گھر سے بھی بھگایا

    تین طلاق کے معاملہ پر جہاں ملک کی پارلیمنٹ میں بحث جاری ہے ۔ تین طلاق سے متعلق بل لوک سبھا میں پاس ہوچکا ہے اور اب یہ راجیہ سبھا میں زیر بحث ہے ۔

    تین طلاق کے معاملہ پر جہاں ملک کی پارلیمنٹ میں بحث جاری ہے ۔ تین طلاق سے متعلق بل لوک سبھا میں پاس ہوچکا ہے اور اب یہ راجیہ سبھا میں زیر بحث ہے ۔

    تین طلاق کے معاملہ پر جہاں ملک کی پارلیمنٹ میں بحث جاری ہے ۔ تین طلاق سے متعلق بل لوک سبھا میں پاس ہوچکا ہے اور اب یہ راجیہ سبھا میں زیر بحث ہے ۔

    • Share this:
      مظفر نگر : تین طلاق کے معاملہ پر جہاں ملک کی پارلیمنٹ میں بحث جاری ہے ۔ تین طلاق سے متعلق بل لوک سبھا میں پاس ہوچکا ہے اور اب یہ راجیہ سبھا میں زیر بحث ہے ۔ اسی درمیان اس سے جڑا ایک معاملہ اترپردیش کے شہر مظفر نگر میں سامنے آیا ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ یہاں مائیکے بات کرانے کی مانگ پر ایک خاتون کی اس کے شوہر نے جم کر پٹائی کردی اور پھر تین طلاق کی دھمکی دے کر گھر سے بھگا دیا۔
      دراصل معاملہ مظفر نگر کے ککرولی تھانہ حلقہ کے گاوں تیوڑا کا ہے ۔ یہاں سلیمہ نے اپنے شوہر سے اپنے گھر والوں سے فون پر بات کرانے کیلئے کہا ، اسی بات پر شوہر ناراض ہوگیا اور وہ مائیکے والوں سے فون پر بات کرانے کی بجائے سلیمہ سے مار پیٹ کرنے لگا۔
      معاملہ یہی نہیں رکا ۔ شوہر نے مار پیٹ کے بعد اسے گاوں کے باہر ایک باغ کے پاس لے گیا اور چھوڑ دیا ۔ علاوہ ازیں اس نے گھر لوٹنے اور کسی سے بھی بات کرکے شکایت کرنے پر تین طلاق کی دھمکی بھی دی۔ متاثرہ کسی طرح اپنے مائیکے پہنچے ، جہاں بعد میں اپنے والد کے ساتھ ککرولی تھانہ پہنچی ۔ متاثرہ نے اپنے شوہر کے خلاف تحریر بھی دیدی ہے۔
      سلیمہ کے مطابق جب اس نے کہا کہ میری مائیکے والوں سے بات کرا دو تو شوہر نے مار پیٹ کی اور اسے یہاں چھوڑ گیا ۔ یہی نہیں شوہر کہنے لگا کہ ہم تم کو طلاق دیدیں گے ۔ متاثرہ کے والد نے بتایا کہ میری بیٹی کو مار پیٹ کر چھوڑ دیا ہے ، اسی کی شکایت درج کرانے وہ ککرولی تھانہ گئے تھے۔
      First published: