உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Kashmir: کشمیر سے متعلق ’متنازعہ‘ پوسٹ، ہیونڈائی انڈیا نے جاری کیا بیان

    تاہم #BoycottHyundai ہندوستان میں ٹویٹر پر ٹرینڈ کرنا شروع کر دیا ہے۔ بہت سے لوگوں نے کمپنی کو ’یوم یکجہتی کشمیر‘ پر اپنی سوشل میڈیا پوسٹس کے لیے سخت تنقیدیں کی ہیں۔

    تاہم #BoycottHyundai ہندوستان میں ٹویٹر پر ٹرینڈ کرنا شروع کر دیا ہے۔ بہت سے لوگوں نے کمپنی کو ’یوم یکجہتی کشمیر‘ پر اپنی سوشل میڈیا پوسٹس کے لیے سخت تنقیدیں کی ہیں۔

    تاہم #BoycottHyundai ہندوستان میں ٹویٹر پر ٹرینڈ کرنا شروع کر دیا ہے۔ بہت سے لوگوں نے کمپنی کو ’یوم یکجہتی کشمیر‘ پر اپنی سوشل میڈیا پوسٹس کے لیے سخت تنقیدیں کی ہیں۔

    • Share this:
      پاکستان (Pakistan) میں کمپنی کے ڈیلر کی جانب سے کشمیر (Kashmir) سے متعلق سوشل میڈیا پر یکجہتی کے پیغامات شیئر کرنے کے بعد آٹوموبائل بنانے والی کمپنی ہنڈائی بھارت (Hyundai India) کے ضمن میں تنازعہ پیدا ہوا ہے۔ کمپنی کے انڈیا یونٹ نے ایک بیان شیئر کیا، جس میں اس کی غیر حساس مواصلت کے لیے صفر رواداری کی پالیسی کو اجاگر کیا گیا۔

      پانچ فروری 2022 کو ہنڈائی پاکستان (Hyundai Pakistan) کے سوشل میڈیا ہینڈلز نے ’کشمیری بھائیوں‘ کے ساتھ ان کی ’جدوجہد آزادی‘ میں اظہار یکجہتی کے لیے پوسٹس شیئر کیں۔ پاکستان 5 فروری کو کشمیر میں علیحدگی پسند تحریک کی حمایت کا اظہار کرنے کے لیے ’یوم یکجہتی کشمیر‘ (Kashmir Solidarity Day) کے طور پر مناتا ہے۔ سوشل میڈیا پوسٹس کو بعد میں ہٹا دیا گیا۔

      تاہم #BoycottHyundai ہندوستان میں ٹویٹر پر ٹرینڈ کرنا شروع کر دیا ہے۔ بہت سے لوگوں نے کمپنی کو ’یوم یکجہتی کشمیر‘ پر اپنی سوشل میڈیا پوسٹس کے لیے سخت تنقیدیں کی ہیں۔ تنازعہ کے بعد ہنڈائی انڈیا نے ایک بیان جاری کیا کہ وہ ’قوم پرستی کا احترام کرنے کے اپنے اخلاقی اصول پر مضبوطی سے کھڑا ہے۔
      ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ہیونڈائی موٹر انڈیا کو جوڑنے والی غیر منقولہ سوشل میڈیا پوسٹ اس عظیم ملک کے لیے ہماری بے مثال وابستگی اور خدمات کو ٹھیس پہنچا رہی ہے۔ ہندوستان ہنڈائی برانڈ کا دوسرا گھر ہے اور ہم غیر حساس مواصلات کے خلاف صفر رواداری کی پالیسی رکھتے ہیں اور ہم اس طرح کے کسی بھی نظریے کی سختی سے مذمت کرتے ہیں۔ ہنڈائی پاکستان کی سوشل میڈیا پوسٹ پر ہندوستانی ٹویٹر کا ردعمل یہ ہے: Hyundai نے پاکستان میں نشاط گروپ کی ذیلی کمپنی نشاط ملز کے ساتھ شراکت داری کی ہے۔

      ہنڈائی موٹر انڈیا ماروتی سوزوکی انڈیا کے بعد ملک میں دوسری سب سے بڑی کار ساز کمپنی ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: