اپنا ضلع منتخب کریں۔

    دہلی اعلامیہ میں دہشت گردی کے خلاف زیرو ٹالرنس کا مطالبہ، اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل باڈی نے کی تائید

    دہشت گردی کو کسی مذہب، قومیت، تہذیب یا نسلی گروہ سے نہیں جوڑا جانا چاہیے

    دہشت گردی کو کسی مذہب، قومیت، تہذیب یا نسلی گروہ سے نہیں جوڑا جانا چاہیے

    اجلاس میں اقوام متحدہ کی مختلف قراردادوں پر مکمل اور موثر عمل درآمد کے ذریعے دہشت گردی کی تمام شکلوں اور مظاہر کے انسداد کے لیے فوری کارروائی کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔ کمیٹی نے اس بات کا اعادہ کیا کہ ہر قسم کی دہشت گردی بین الاقوامی امن اور سلامتی کے لیے سب سے سنگین خطرات میں سے ایک ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Mumbai | Delhi | Jammalamadugu | Hyderabad | Lucknow Cantonment
    • Share this:
      اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی انسداد دہشت گردی کمیٹی نے ہفتے کے روز رکن ممالک سے دہشت گردی کی سرگرمیوں کے تئیں ’’زیرو ٹالرنس‘‘ کو یقینی بنانے کا مطالبہ کیا اور ہندوستان میں اپنے دو روزہ خصوصی اجلاس کے اختتام پر اس لعنت سے مزید سختی سے نمٹنے کا عزم کیا۔ اجلاس میں اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے 15 رکن ممالک کے نمائندوں اور انسداد دہشت گردی کے عالمی ماہرین نے شرکت کی، اس دوران دہشت گردی اور دہشت گردی کی مالی معاونت کے چیلنج سے نمٹنے کے لیے کونسل کی ترجیحات کی فہرست میں دہلی اعلامیہ کو اپنایا گیا۔

      کراؤڈ فنڈنگ ​​پلیٹ فارم:


      دستاویز میں عالمی ادارے نے دہشت گردی کے مقاصد کے لیے انٹرنیٹ اور سوشل میڈیا پلیٹ فارمز سمیت دیگر معلوماتی اور مواصلاتی ٹیکنالوجیز کے بڑھتے ہوئے استعمال پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔ اس میں کہا گیا کہ کراؤڈ فنڈنگ ​​پلیٹ فارم جیسی مالیاتی ٹیکنالوجیز میں ایجادات دہشت گردوں کی مالی معاونت کے لیے غلط استعمال ہونے کا خطرہ پیش کرتی ہیں۔ اس دوران فضائی نظام کے بڑھتے ہوئے عالمی غلط استعمال پر تشویش کا اظہار کیا گیا۔


      کاؤنٹر ٹیرر کونسل نے تمام رکن ممالک پر زور دیا کہ وہ دہشت گردی کے خلاف زیرو ٹالرنس کو یقینی بنائیں، اعلامیہ کے مطابق انسانی حقوق کے قانون سمیت بین الاقوامی قوانین کے تحت اپنی ذمہ داریوں کو ادا کرے۔ ہندوستان نے کمیٹی کے سربراہ کی حیثیت سے اس اجلاس کی میزبانی کی۔ جبکہ دوسرے اور آخری دن کی میٹنگ ہفتہ کو دہلی میں ہوئی، پہلے دن کی تقریبات ممبئی میں ہوئیں۔

      یہ بھی پڑھیں: 


      اجلاس میں اقوام متحدہ کی مختلف قراردادوں پر مکمل اور موثر عمل درآمد کے ذریعے دہشت گردی کی تمام شکلوں اور مظاہر کے انسداد کے لیے فوری کارروائی کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔ کمیٹی نے اس بات کا اعادہ کیا کہ ہر قسم کی دہشت گردی بین الاقوامی امن اور سلامتی کے لیے سب سے سنگین خطرات میں سے ایک ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: