உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جموں وکشمیر میں دراندازی کی کوشش ناکام، جیش محمد کے چار انتہا پسند ہلاک

    علامتی تصویر

    علامتی تصویر

    سری نگر۔ جموں و کشمیر میں بارہمولہ ضلع کے اری سیکٹر میں سلامتی دستوں کی ایک مشترکہ مہم میں آج جیش محمد کے چار انتہا پسند مارے گئے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      سری نگر۔ جموں و کشمیر میں بارہمولہ ضلع کے اری سیکٹر میں سلامتی دستوں کی ایک مشترکہ مہم میں آج جیش محمد کے چار انتہا پسند مارے گئے۔ پولیس سپرنٹندنٹ ڈاکٹر ایس پی وید نے کہا کہ فوج، ریاستی پولیس اور سی آر پی ایف نے آج صبح اری سیکٹر کے دولاجانا میں ایک مشترکہ مہم چلائی جس میں پاکستان کے قبضے والے کشمیر کی طرف سے سرحد میں  دراندازی کرنے کی کوشش کررہے چار انتہا پسند مارے گئے۔

      ڈاکٹر وید نے کہا کہ سلامتی دستوں نے انتہا پسندوں کو خودسپردگی کرنے کے لئے کہا لیکن انہوں نے اندھا دھند گولی باری کرنا شروع کردی ۔ سلامتی دستوں کے جوانوں نے بھی جوابی کارروائی کی جس میں چار انتہا پسند مار ے گئے۔ انہوں نے کہا کہ ابتدائی مڈبھیڑ میں تین انتہا پسند مارے گئے تھے لیکن بعد میں ایک اور مارا گیا۔ انہوں نے کہا کہ انتہا پسند سلامتی دستوں پر فدائی حملہ کا منصوبہ بنا رہے تھے۔

      ڈاکٹر وید نے ٹوئیٹ کرکے کہا ’ جموں و کشمیر پولیس /فورس/سی آر پی ایف نے اری سیکٹر میں دراندازی کی کوشش کر رہے تین انتہا پسندوں کو مار گرایا ہے۔ چوتھے انتہا پسند کی تلاش جاری ہے۔ انہوں نے ایک دوسرے ٹوئیٹ میں کہا کہ ہم نے چوتھے انتہا پسند کو بھی مار گرایا ہے۔

      First published: