ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

یوم جمہوریہ پریڈ میں زمین سے لےکرآسمان تک دنیا نے دیکھی ہندوستان کی طاقت

سترویں یوم جمہوریہ تقریب میں ثقافتی ورثے کی جھلک اورآئی این اے کے فوجی کی شمولیت بھی دیکھنے کو ملی۔ جنوبی افریقہ کے صدرسيرل راما فوسا تقریب کے مہمان خصوصی تھے۔

  • UNI
  • Last Updated: Jan 26, 2019 03:06 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
یوم جمہوریہ پریڈ میں زمین سے لےکرآسمان تک دنیا نے دیکھی ہندوستان کی طاقت
راج پتھ پرہندوستان نے دنیا کو دکھائی طاقت

نئی دہلی: ملک کی عظیم فوجی طاقت، تاریخی ثقافتی ورثہ اورکثرت میں وحدت کی شاندار روایت کی آج راج پتھ پریوم جمہوریہ پریڈ میں خوبصورت جھلک دکھائی دی، جس میں پہلی بارآزاد ہند فوج (آئی این اے ) کے سابق فوجیوں نے بھی حصہ لیا۔ 70 ویں یوم جمہوریہ کی اہم تقریب راج پتھ پرمنعقد ہوئی۔ جنوبی افریقہ کے صدرسيرل راما فوسا تقریب کے مہمان خصوصی تھے اوریوم جمہوریہ کے موقع پرہندوستانی تقریب میں حصہ لینےآئے لیڈروں کو بھی اس کےلئے خاص طورپرمدعو کیا گیا تھا۔


دارالحکومت میں سیکورٹی کے چاق چوبند انتظامات کئے گئے تھے اورپریڈ کے مقامات، آس پاس کی عمارتوں کی چھتوں پرشارپ شوٹراوران سے متصل علاقوں کے چپے چپے پر سیکورٹی اہلکار تعینات کئے گئے تھے۔


اس سے پہلے وزیراعظم نریندرمودی، وزیردفاع نرملا سیتا رمن اورتینوں افواج کے سربراہان نےانڈیا گیٹ واقع امرجوان جیوتی پرجاکرشہیدوں کوخراج عقیدت پیش کیا۔ اس کے بعد وزیراعظم سلامی پلیٹ فارم کے قریب صدرجمہوریہ رام ناتھ کووند اورتقریب کےمہمان خصوصی جنوبی افریقہ کے صدرسیرل راما فوسا سے ملے۔


صدرجمہوریہ نے سلامی پلیٹ فارم پرقومی جھنڈا لہرایا، جس کے بعد انہیں21 توپوں کی سلامی دی گئی اورفوج کے ایم آئی -17 ہیلی كاپٹرو ں نے راج پتھ پرپھولوں بارش کی، جس ناظرین کی خوشی کا ٹھکانا نہیں رہا۔ صدرجمہوریہ نے جموں وکشمیرمیں دہشت گردوں سے لوہا لیتے ہوئے شہید ہونے والے فوج کے لانس نائک نذیراحمد وانی کی بیوہ مہہ جبیں کوامن عہد کا اعلی ترین اعزازاشوک چکر سے نوازا۔ اس دوران راج پتھ پرماحول جذباتی ہوگیا۔  





پریڈ میں فوج کی قیادت61 كیولیري گھڑسواردستے، 8 مكینائزڈ کالم، 6 مارچنگ دستوں کے ساتھ ساتھ دھورواوررودرہیلی کاپٹرنےکی۔ سابق فوجیوں کی جھانکی بھی راج پتھ سے گزری۔ راج پتھ پرجھانکیوں کے ذریعے اپنی ثقافتی جھلک دکھانے والے ریاستوں، مرکزکے زیرانتظام علاقوں اوروزارتوں میں سکم، مہاراشٹر، انڈمان اورنیکوبار، آسام، تریپورہ، گوا، اروناچل پردیش، پنجاب، تامل ناڈو، گجرات، جموں کشمیر، کرناٹک، اتراکھنڈ، دہلی ، اتر پردیش، مغربی بنگال، پینے کے پانی اورسوچھتا کی وزارت، وزارت ریلوے، ہندوستانی زرعی تحقیقی کونسل، مرکزی انڈسٹریل سیفٹی فورس اورسینٹرل پبلک ورکس ڈپارٹمنٹ شامل تھے۔

وزیراعظم قومی بچہ ایوارڈ سے 26 بچے بھی جیپ میں سوارہوکرسلامی پلیٹ فارم سے گزرے۔ ان بچوں کوتعلیمی، کھیل، بہادراوراختراعات جیسے 6 شعبوں سے منتخب کیا گیا تھا۔ سب سے آخرمیں ایئرفورس کے لڑاکا طیاروں نے گھن گرج کا مظاہرہ کرتے اورکرتب دکھاتے ہوئے ٹھیک سلامی پلیٹ فارم کے اوپرسے گزرےاورپورے راج پتھ اورآس پاس کے علاقوں کواپنی گونج سے متحیرکردیا۔  





پریڈ کے پیش نظر دارالحکومت میں 50 ہزارسے زائد سیکورٹی اہلکارتعینات کئے گئے تھے اوروجے چوک سے لال قلعہ تک 600 سی سی ٹی وی کیمرے لگائے گئے تھے۔ پریڈ کے مقامات کے قریب سڑکیں بند کردی گئی تھیں ۔ دہلی کی لائف لائن میٹرو میں سکیورٹی کے لئے وسیع انتظامات بھی کئے گئے تھے۔ پریڈ کے دوران کچھ اسٹیشنوں کو مکمل طورپربند کردیا گیا اوردیگر گیٹوں کو بند کردیا گیا۔



سیکورٹی کے نقطہ نظرسے، دارالحکومت کو 28 حصوں میں تقسیم کیا گیا تھا اورہرسیکٹرکی ذمہ داری سینئر پولیس افسران کو دی گئی تھی۔ تمام بڑے بازاروں، ریلوے-میٹرو اسٹیشنوں، ہوائی اڈے، بس اڈے، تاریخی اورمذہبی مقامات سمیت گنجان آبادی والےعلاقے میں سیکورٹی کے پختہ انتظامات کئے گئے تھے۔ بہت سے اہم مقامات کی سیکورٹی کی ذمہ داری فوج نے لے رکھی تھی۔ راجدھانی سے متصل دوسری ریاستوں کی سرحد کے ساتھ دیگراہم مقامات پر سیکورٹی میں اضافہ کردیا گیا۔
First published: Jan 26, 2019 03:00 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading