ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

سعودی کرنسی نوٹ میں کشمیر، لداخ کو علیٰحدہ ملک دکھانے پر ہندوستان کا سخت اعتراض

وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ ہم نے سعودی حکومت سے فوری اصلاحی اقدامات کرنے کی اپیل کی ہے۔ ہم نے سعودی حکومت کو یہ بھی بتایا ہے کہ کشمیر اور لداخ ہندوستان کے اٹوٹ حصے ہيں۔

  • UNI
  • Last Updated: Oct 30, 2020 10:36 AM IST
  • Share this:
سعودی کرنسی نوٹ میں کشمیر، لداخ کو علیٰحدہ ملک دکھانے پر ہندوستان کا سخت اعتراض
وزارت خارجہ کے ترجمان انوراگ شریواستو کی فائل فوٹو

نئی دہلی۔ ہندوستان نے سعودی عرب کے نئے کرنسی نوٹ پر کشمیر اور لداخ کو عالمی نقشے میں علیحدہ ملک دکھانے پر سخت اعتراض درج کیا ہے اور سعودی حکومت سے اپیل کی ہے کہ یہ علاقے ہندوستان کے اٹوٹ حصے ہیں اور نقشہ میں غلطی کا ازالہ کرنے کے لیے فوری کارروائی ہونی چاہئے۔ وزارت خارجہ کے ترجمان انوراگ شریواستو نے یہاں معمول کی پریس بریفنگ میں سعودی عرب کی جانب سے جاری کیے گئے ریال کے ایک نئے نوٹ پر عالمی نقشہ میں ہندوستان کی بین الاقوامی سرحدوں کو غلط انداز میں پیش کرنے کے سوال کے جواب میں کہا کہ ہندوستان نے نئی دہلی میں سعودی عرب کے سفارت خانہ کو اور ریاض میں سعودی عرب کے محکمہ خارجہ کو سعودی کرنسی نوٹ پر ہندوستان کی سرحدوں کو غلط انداز میں پیش کرنے پر اپنے تحفظات سے آگاہ کردیا ہے۔


ترجمان نے کہا کہ ہم نے سعودی حکومت سے فوری اصلاحی اقدامات کرنے کی اپیل کی ہے۔ ہم نے سعودی حکومت کو یہ بھی بتایا ہے کہ کشمیر اور لداخ ہندوستان کے اٹوٹ حصے ہيں۔ جموں وکشمیر میں زمین کی ملکیت سے متعلق قوانین میں تبدیلی کے بارے میں پاکستان کے تبصرے پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے شریواستو نے دوٹوک الفاظ میں کہا کہ کسی بھی ملک کو ہندوستان کے اندرونی معاملات پر تبصرہ کرنے کا حق نہیں ہے۔



کرتار پور راہداری سے متعلق ایک سوال کے جواب میں ترجمان نے کہا کہ کرتار پور راہداری کو دوبارہ کھولنے کا فیصلہ کووڈ- 19 کے پروٹوکول کو مدنظر رکھتے ہوئے کیا جائے گا۔ حکومت ہند اس سلسلے میں متعلقہ فریقوں کے ساتھ رابطے میں ہے۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Oct 30, 2020 10:36 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading