اپنا ضلع منتخب کریں۔

    فیس بک تنازع : ہندوستان نے کیمبرج اینالیٹیکا کو بھیجا نوٹس ، سات دنوں میں کلائنٹس کے نام بتانے کیلئے کہا

    علامتی تصویر

    علامتی تصویر

    ہندوستان نے فیس بک ڈیٹا معاملہ میں سخت موقف اختیار کرتے ہوئے برطانیہ میں واقع کیمبرج اینالیٹیکا کو نوٹس جاری کیا ہے ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : ہندوستان نے فیس بک ڈیٹا معاملہ میں سخت موقف اختیار کرتے ہوئے برطانیہ میں واقع کیمبرج اینالیٹیکا کو نوٹس جاری کیا ہے ۔ اس میں حکومت نے پوچھا ہے کہ کیا انتخابات کو متاثر یا فیس بک پر موجود ہندوستانیوں کی معلومات کا بیجا استعمال کیا گیا ہے ؟ ۔

      مرکزی حکومت کی جانب سے جاری نوٹس میں کیمبرج اینالیٹیکا سے چھ سوال پوچھے گئے ہیں اور کمپنی کو جواب دینے کیلئے اکتیس مارچ تک کا وقت دیا گیا ہے ۔ اس میں پوچھا گیا ہے کہ کمپنی نے کس طرح سے ڈیٹا جمع کیا ۔ اس ڈیٹا کا کس طرح استعمال کیا گیا اور کیا اس کیلئے یوزرس کی رضامندی لی گئی ۔

      حکومت ہند نے کیمبرج اینالیٹیکا سے اس کی خدمات لینے والی کمپنیوں کے نام بھی پوچھے ہیں ۔ نوٹس میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ کیا کمپنی ہندوستانیوں کے ڈیٹا کا استعمال کررہی ہے اور کیا س طرح کے ڈیٹا کی بنیاد پرکوئی پروفائلنگ کی گئی تھی ؟۔

      کیمبرج اینالیٹیکا پر الزام ہے کہ اس نے غلط طریقہ سے پانچ کروڑ سے زیادہ فیس بک صارفین کے پروفائلس سے معلومات جمع کرکے انتخابات کو متاثر کیا ۔ اس معاملہ کے انکشاف کے بعد امریکہ اور برطانیہ کی ایجنسیاں فیس بک اور کیمبرج اینالیٹیکا کی جانچ کر رہی ہیں ۔ ( ایجنسی ان پٹ کے ساتھ )۔
      First published: