உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ہندوستان 76 ویں جشن یوم آزادی کیلئے تیار! وزیر اعظم لال قلعہ سے 9ویں بار قوم سے کریں گے خطاب

    وزیر اعظم نریندر مودی

    وزیر اعظم نریندر مودی

    یوم جمہوریہ 2022 کے دوران اٹھائے گئے پہل کے تسلسل میں سماج کے گمنام ہیروز کو تقریب کے مہمان خصوصی کے طور پر مدعو کیا گیا ہے۔ جنہیں عام طور پر نظر انداز کر دیا جاتا ہے، ان میں آنگن واڑی کارکنان، گلیوں میں دکاندار، مدرا اسکیم کے قرض لینے والے اور مردہ خانے کے کارکن شامل ہیں۔

    • Share this:
      وزیر اعظم نریندر مودی (Narendra Modi) پیر کو دہلی میں تاریخی لال قلعہ (Red Fort) کی فصیل سے یوم آزادی (Independence Day) کی تقریبات کی قیادت کریں گے۔ وہ قومی پرچم لہرائیں گے اور مسلسل نویں مرتبہ قوم سے روایتی خطاب کریں گے۔

      پہلی بار حکومت کے 'میک ان انڈیا' (Make in India) اقدام کے تحت تیار کی گئی گھریلو ہووٹزر گن، ایڈوانسڈ ٹووڈ آرٹلری گن سسٹم (اے ٹی اے جی ایس) رسمی 21 توپوں کی سلامی کے دوران فائر کی جائے گی۔ یہ بندوق مکمل طور پر دیسی ہے، جسے ڈی آر ڈی او نے ڈیزائن اور تیار کیا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں :

      Har Ghar Tiranga: وادی کشمیر میں سرگرم دہشت گردوں کے گھروں پر بھی ترنگا!

      Shah Rukh: شاہ رخ خان کے بیٹے ابرام نے لہرایاجھنڈا، فخر، محبت اور خوشی کا کیااظہار

      یوم جمہوریہ 2022 کے دوران اٹھائے گئے پہل کے تسلسل میں سماج کے گمنام ہیروز کو تقریب کے مہمان خصوصی کے طور پر مدعو کیا گیا ہے۔ جنہیں عام طور پر نظر انداز کر دیا جاتا ہے، ان میں آنگن واڑی کارکنان، گلیوں میں دکاندار، مدرا اسکیم کے قرض لینے والے اور مردہ خانے کے کارکن شامل ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں:

      Police Medals: یوم آزادی کےموقع پرجموں کشمیرپولیس ملااعزاز،نمایاں خدمات کےلیےملے125تمغے


      لال قلعہ پہنچنے پر وزیر اعظم کا استقبال وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ، ایم او ایس اجے بھٹ اور دفاعی سکریٹری ڈاکٹر اجے کمار کریں گے۔ دفاعی سکریٹری جنرل آفیسر کمانڈنگ (جی او سی)، دہلی ایریا، لیفٹیننٹ جنرل وجے کمار مشرا، اے وی ایس ایم کو وزیر اعظم سے ملوائیں گے۔ اس کے بعد پی ایم مودی کو سلیوٹنگ بیس تک لے جائے گا جہاں ایک مشترکہ انٹر سروسز اور دہلی پولیس گارڈ وزیر اعظم کو عمومی سلامی پیش کریں گے۔ اس کے بعد وزیراعظم گارڈ آف آنر کا معائنہ کریں گے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: