உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    President of India: آج ہندوستان کو ملیں گے پندریوں صدر! گنتی کا کیا ہے طریقہ کار؟ کیسے ہوگی نئے صدر کی تبدیلی؟

    Youtube Video

    پولنگ کے دوران ایم پیز سبز قلم کا استعمال کرتے ہوئے بیلٹ پیپرز پر اپنی ترجیحات کا آرڈر لکھتے ہیں، جبکہ ایم ایل اے گلابی قلم استعمال کرتے ہیں۔ دریں اثنا گنتی کے دوران دو ٹرے ہوں گے، ہر امیدوار کے لیے ایک ایک ٹرے رکھیں گئے ہیں۔

    • Share this:
      President of India: ہندوستان میں آج یعنی جمعرات کو اپنا پندرہواں صدر مل جائے گا، کیونکہ صدارتی انتخابات کے لیے ووٹوں کی گنتی کی جائے گی، جس کے لیے 18 جولائی کو ہونے والی پولنگ میں ممبران پارلیمنٹ اور ایم ایل ایز نے حصہ لیا تھا۔ ملک کے اعلیٰ ترین آئینی عہدے پر فائز ہونے کے لیے یہ اہم عہدہ ہے۔

      دوسری طرف اپوزیشن کے مشترکہ امیدوار یشونت سنہا کے امکانات انتہائی کم ہیں۔ دریں اثنا صدارتی انتخابات کے لیے ووٹوں کی گنتی کا طریقہ یہ ہے:

      (1.) سب سے پہلے ریٹرننگ افسران ڈالے گئے ووٹوں کو چھانٹ کر چیک کریں گے۔

      (2.) پولنگ کے دوران ایم پیز سبز قلم کا استعمال کرتے ہوئے بیلٹ پیپرز پر اپنی ترجیحات کا آرڈر لکھتے ہیں، جبکہ ایم ایل اے گلابی قلم استعمال کرتے ہیں۔

      (3.) دریں اثنا گنتی کے دوران دو ٹرے ہوں گے، ہر امیدوار کے لیے ایک ایک ٹرے رکھیں گئے ہیں۔

      (4.) پہلے قانون ساز اسمبلی کے ارکان کے بیلٹ پیپرز کی چھانٹی کی جائے گی، اس کے بعد ارکان پارلیمنٹ کے بیلٹ پیپرز کی چھانٹی کی جائے گی۔

      (5.) مرمو (Draupadi Murmu) کے نام کے کاغذات اس کے نام کے ساتھ ٹرے میں رکھے جائیں گے اور سنہا (Yashwant Sinha) کے نام والے کاغذات ان کے ٹرے میں رکھیں جائیں گے۔

      (6.) چھانٹی مکمل ہونے کے بعد ہی گنتی شروع ہوگی۔

      (7) ہر رکن پارلیمنٹ کے ووٹ کی قیمت 700 ہے، جو کہ کل 776 ارکان پارلیمنٹ کے لیے 543,200 ہے۔ ہر قانون ساز کے ووٹ کی قدر ان کی ریاست کی آبادی پر منحصر ہے۔ 4,033 ایم ایل ایز کے ووٹوں کی کل قیمت 543,231 ہے۔

      مزید پڑھیں: 

      (8.) لہذا صدارتی انتخابات کے دوران 4,809 ووٹرز ووٹ ڈالتے ہیں، ان کے ووٹوں کی مجموعی قیمت 1,086,431 ہے۔

      مزید پڑھیں:

      (9.) مطلوبہ کوٹہ سے زیادہ ووٹ لینے والا امیدوار یعنی 50 فیصد سے زیادہ ووٹ حاصل کرنے والا فاتح قرار دیا جاتا ہے۔

      (10.) فاتح امیدوار 25 جولائی کو حلف اٹھائے گا۔ مرمو اگر منتخب ہوتی ہیں تو وہ ہندوستان کی پہلی قبائلی خاتون اور دوسری خاتون صدر ہوں گی۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: