ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

بھارتیہ کسان یونین تومر کا اعلان، زرعی قوانین واپس نہ لیے جانے پر 26 جنوری کو دہلی کی پریڈ روڈ پر ٹریکٹر لیکر پہچیں گے کسان

میرٹھ میں بھارتیہ کسان یونین تومر نے میرٹھ کینٹ ریلوے اسٹیشن پر کسان پنچایت کا انعقاد کرکے تین زرعی قوانین کو جلد ختم کرنے کا فیصلہ لینے کا مطالبہ کیا ہے اور 26 جنوری تک قوانین واپس لینے کا فیصلہ نہ لینے پر لال قلعہ پریڈ روڈ پر ٹریکٹر ریلی نکالنے کا حکومت کو انتباہ کیا ہے۔

  • Share this:
بھارتیہ کسان یونین تومر کا اعلان،  زرعی قوانین واپس نہ لیے جانے پر 26 جنوری کو دہلی کی پریڈ روڈ پر ٹریکٹر لیکر پہچیں گے کسان
میرٹھ میں بھارتیہ کسان یونین تومر نے میرٹھ کینٹ ریلوے اسٹیشن پر کسان پنچایت کا انعقاد کرکے تین زرعی قوانین کو جلد ختم کرنے کا فیصلہ لینے کا مطالبہ کیا ہے اور 26 جنوری تک قوانین واپس لینے کا فیصلہ نہ لینے پر لال قلعہ پریڈ روڈ پر ٹریکٹر ریلی نکالنے کا حکومت کو انتباہ کیا ہے۔

زرعی قوانین کے خلاف کسانوں کے احتجاجی دھرنے کی حمایت میں دِیگر کسان تنظیموں کا احتجاجی مظاہرہ مسلسل جاری ہے اسی سلسلے میں آج میرٹھ میں بھارتیہ کسان یونین تومر نے میرٹھ کینٹ ریلوے اسٹیشن پر کسان پنچایت کا انعقاد کرکے تین زرعی قوانین کو جلد ختم کرنے کا فیصلہ لینے کا مطالبہ کیا ہے اور 26 جنوری تک قوانین واپس لینے کا فیصلہ نہ لینے پر لال قلعہ پریڈ روڈ پر ٹریکٹر ریلی نکالنے کا حکومت کو انتباہ کیا ہے۔

بھارتیہ کسان یونین کے تومر گروپ نے آج سبھی ضلع کے ریلوے اسٹیشن کے باہر کسان پنچایت کا انعقاد کیا تھا , بھارتیہ کسان یونین تومر کے منڈل صدر چودھری پدم سنگھ سانگون نے کہا کہ گزشتہ ڈیڑھ ماہ سے زیادہ وقت ہو چکا ہے۔ کسانوں کو دہلی بارڈر پر احتجاجی دھرنے پر بیٹھے ہوئے لیکن سرکار صرف بات چیت کا دکھاوا کرکے معاملے کو ٹالنے کی کوشش کرتی نظر آ رہی ہے نہ کہ معاملے کو حل کرنے کا ارادہ ظاہر کرتی ہوئے ایسے میں سرکار کی نیت پر یقین رکھنا ممکن نہیں ہے۔


سرکار کسانوں کو زرعی قوانین کے فائدے تو بتا رہی ہے لیکن زرعی قوانین پر کسانوں کے اعتراضات کو نظر انداز کر رہی ہے ایسے میں بات چیت کو آگے بڑھانے کا کوئی مقصد نظر نہیں آتا ، کسان آندولن سے وابستہ تنظیموں کی شروع سے ایک ہی مطالبہ ہے کہ تینوں زرعی قوانین کو فوراً ختم کیا جائے اور سوامیناتھن کمیشن کی سفارشات کے مطابق زراعت سدھار پالیسی کو لاگو کیا جائے۔

Published by: Sana Naeem
First published: Jan 13, 2021 07:35 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading