ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکشمیر: انٹرنیٹ پر پابندی کے بعد لوگ تفریحی سامان کے لئے خرید رہے ہیں سی ڈیز

وادی کشمیرمیں انٹرنیٹ خدمات کی مسلسل معطلی سےلوگوں بالخصوص نوجوانوں کا تفریحی سامان جیسے موبائل فون پرویڈیو شیئرنگ ویب سائٹ یوٹیوب کے ذریعہ فلمیں، ڈرامے وغیرہ دیکھنا، ختم ہوا ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Dec 16, 2019 11:38 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
جموں وکشمیر: انٹرنیٹ پر پابندی کے بعد لوگ تفریحی سامان کے لئے خرید رہے ہیں سی ڈیز
جموں وکشمیر میں آرٹیکل 370 ہٹائے جانے کے بعد سے انٹرنیٹ پر پابندی عائد ہے۔

سری نگر: وادی کشمیرمیں انٹرنیٹ خدمات کی مسلسل معطلی سےلوگوں بالخصوص نوجوانوں کا تفریحی سامان جیسے موبائل فون پرویڈیوشیئرنگ ویب سائٹ یوٹیوب کے ذریعہ فلمیں، ڈرامے وغیرہ دیکھنا، ختم ہوا ہےجس کے نتیجے میں کمپیکٹ ڈسکس (سی ڈیز) کی خرید و فروخت کے رجحان کو فروغ حاصل ہوا ہے۔


واضح رہے کہ وادی کشمیرمیں 5 اگست سےتمام طرح کی انٹرنیٹ سہولیات تواترکے ساتھ معطل ہیں، جس کے نتیجےمیں لوگوں بالخصوص صحافیوں، طلبا اورتاجروں کومتنوع مسائل و مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ لوگوں کا کہنا ہےکہ وادی میں سینما گھروں کی عدم موجودگی کی وجہ سے نوجوان طبقہ اب موبائل فونوں پرہی یوٹیوب کےذریعے فلمیں وغیرہ دیکھ کراپنے لئےتفنن طبع کا سامان فراہم کرتےتھے۔


نوجوانوں کےایک گروپ، جنہوں نے سری نگرکے مشہورسنڈے مارکیٹ میں چار، چارپانچ، پانچ سی ڈیزخریدی تھیں، نے وادی میں تفنن طبع کےلئے میسرتفریحی سامان کی قلت کے متعلق بات کرتےہوئے یو این آئی اردوکوبتایا: 'وادی میں تفریحی سامان کی ازحد کمی ہے، نہ سینما گھر ہےاورنہ ہی دوسرے تفریحی وسائل میسر ہیں اب یہاں کے نوجوان موبائل فونوں پر ہی یوٹیوب کے ذریعے فلمیں، ڈرامے اور دیگر تفریحی پروگراموں سے لطف اندوز ہورہے تھے، لیکن جب سے انٹرنیٹ بند ہوا تو ہم اس سے بھی محروم ہوئے ہیں، لہٰذا اب ہم سی ڈیز خریدنے پرمجبورہوئے ہیں'۔

First published: Dec 16, 2019 10:23 PM IST