ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

سول سروسیز کے لئے جامعہ ملیہ اسلامیہ میں انٹرویو ٹریننگ، کیا ایک بار پھر کامیابی کو دہرا پائے گی یونیورسٹی؟

یونین پبلک سروس کمیشن کے لئے جامعہ کے 60امیدوار مینس میں کامیاب ہوئے تھے جن میں سے 48امیدواروں کے انٹرویو ہو چکے ہیں

  • Share this:
سول سروسیز کے لئے جامعہ ملیہ اسلامیہ میں انٹرویو ٹریننگ، کیا ایک بار پھر کامیابی کو دہرا پائے گی یونیورسٹی؟
جامعہ ملیہ اسلامیہ: فائل فوٹو

نئی دہلی۔ گزشتہ کچھ سالوں میں مسلم اقلیتی یونیورسٹیاں تعلیم کے میدان میں کچھ بہتر کرتی نظر آرہی ہیں۔ حال ہی میں قومی پیمانہ پر این آئی آر ایف کی رینکنگ میں جامعہ ہمدرد ، اے ایم یو ، جامعہ ملیہ اسلامیہ جیسے اداروں نے اچھی رینکنگ حاصل کی تو ایک اور روشن باب جامعہ ملیہ اسلامیہ کے دریچہ سے سامنے آیا ہے۔جامعہ ملیہ اسلامیہ کے تربیت یافتہ امیدوار وں نے سول سروسیز کے مقابلہ جاتی امتحانات میں بہترین مظاہرہ کیا ہے ۔یونیورسٹی سے ملی تفصیلات کے مطابق جہاں اکیڈمی کے 60 امیدواروں نے یونین پبلک سروس کمیشن کے مینس امتحانات پاس کرنے کے بعد انٹرویو کے لئے کوالیفائی کیا ہے تو وہیں اہم بات یہ ہے کہ اترپردیش ریاست کے پی ایس سی امتحان میں 24 امیدواروں نے کوالیفائی کیا ہے۔ اسی طرح جموں وکشمیر کا پی ایس سی امتحان پاس کرکے 14امیدوار منتخب ہوئے ہیں۔


موک انٹرویو کی تیاری کرا رہے ماہرین گزشتہ کچھ سالو ں میں جامعہ ہمدرد ، ہمدرد سرکل اور زکوة فاﺅنڈیشن آف انڈیا کے امیدواروں سے کہیں بہتر رزلٹ جامعہ کی سول سروس رہائشی اکیڈمی دیتی آرہی ہے ۔لیکن اس کے پیچھے بڑی وجہ یہاں پر کرائی جانے والی تیاری اور طریقہ کار ہے۔کورونا کی وبا کی وجہ سے جہاں پورے ملک میں تعلیمی سرگرمیاں متاثر ہوئی ہیں تو اکیڈمی ان دنو ں منتخب امیدوارو ں کے لئے موک انٹرویو کرا رہی ہے تاکہ ہونے والے پرسنالٹی انٹرویو کا امیدوار بہتر طور پر سامناکر سکے ۔دس ماہرین کا پینل موک انٹرویو لے رہا ہے جن میں سراج حسین، سابق آئی اے ایس ،شاردا پرساد، سابق آئی پی ایس ، راشدہ حسین، سابق آئی آر ایس ،اندرویر یادو، سابق آئی اے ایس ، مہیش مشرا، سابق آئی پی ایس ، ایس ایم خان، سابق آئی آر ایس ، جاوید احمد، سابق آئی پی ایس، خورشید غنائی، سابق آئی اے ایس ، وویک کاٹجو، سابق آئی ایف ایس اور پروفیسر یو ایم امین شامل ہیں۔


یو پی ایس سی کے 12 اور یوپی پی ایس سی کے24 امیدواروں کے ہونے ہیں انٹرویو


یونین پبلک سروس کمیشن کے لئے جامعہ کے 60امیدوار مینس میں کامیاب ہوئے تھے جن میں سے 48امیدواروں کے انٹرویو ہو چکے ہیں جبکہ کورونا وائر س کی وجہ سے 12امیدواروں کے انٹرویو ہونا باقی ہیں۔ امکان ظاہر کیا جا رہا ہے کہ جلد ہی یہ انٹرویو ہو سکتے ہیں۔ اسی طرح اترپردیش پی ایس سی کے لئے کوالیفائی کرنے والے 24امیدواروں کے انٹرویو اسی ماہ 15جولائی سے ہونے ہیں ایسے میں موک انٹرویو کافی کام آسکتے ہیں۔

9سالوں میں اکیڈمی نے دئیے 500 سے زیادہ نوکرشاہ 

جامعہ ملیہ اسلامیہ سول سروس رہائشی کوچنگ اکیڈمی کو سال 2010میں قائم کیا گیا تھا۔ تاہم ان سالوں میں مسلسل اکیڈمی کے نتائج کے گراف میں اضافہ ہوتا رہا ہے ۔اب تک تقریبا پانچ سو سے زیادہ امیدوار نوکرشاہ بنے ہیں۔ صرف یونین پبلک سروس کمیشن کے لئے ہی تقریبا 240امیدوار منتخب ہوئے ہیں جن میں تیسری رینک حاصل کرنے والے جنید احمد بھی شامل ہیں۔ جبکہ 250سے امیدوار مرکزی اور ریاستی سطح کی سروسیز آئی بی ، آر بی آئی ، اے پی ایف اور سی اے پی ایف جیسے محکموں میں گئے ہیں۔ یو پی ایس سی کی سطح پر مسلم امیدواروں کی کامیابی میں بھی اضافہ ہوا ہے۔ اس کا سہرا  دوسرے اداروں کے ساتھ ساتھ جامعہ ملیہ اسلامیہ کو بھی جاتا ہے۔ اب دیکھنا یہ ہے کہ کیا ایک بار پھر یونیورسیٹی کامیابی کو دہرا پائے گی ؟
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Jul 13, 2020 07:47 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading