ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ہندوستان پر نشانے لگانے کے لئے خلیجی ممالک میں رسائی پر اسلامک اسٹیٹ کا زور

نئی دہلی :ـاسلامک اسٹیٹ (آئی ایس) اب عراق اور شام سے باہر پاؤں پھیلاتے ہوئے خلیجی ممالک میں رسائی کرنے کی کوشش میں ہے تاکہ وہاں رہنے والے ہندوستانیوں کے ذریعے ہندوستان پر نشانہ لگاسکے۔

  • UNI
  • Last Updated: Sep 20, 2015 02:09 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
ہندوستان پر نشانے لگانے کے لئے خلیجی ممالک  میں رسائی پر اسلامک اسٹیٹ کا زور
نئی دہلی :ـاسلامک اسٹیٹ (آئی ایس) اب عراق اور شام سے باہر پاؤں پھیلاتے ہوئے خلیجی ممالک میں رسائی کرنے کی کوشش میں ہے تاکہ وہاں رہنے والے ہندوستانیوں کے ذریعے ہندوستان پر نشانہ لگاسکے۔

نئی دہلی :ـاسلامک اسٹیٹ (آئی ایس) اب عراق اور شام سے باہر پاؤں پھیلاتے ہوئے خلیجی ممالک میں رسائی کرنے کی کوشش میں ہے تاکہ وہاں رہنے والے ہندوستانیوں کے ذریعے ہندوستان پر نشانہ لگاسکے۔


خلیجی ممالک میں بڑی تعداد میں ہندوستانی عرصے سے رہ رہے ہیں اس لئے اسے ہندوستان پر نشانہ لگانے کے لئے یہ راستہ آسان نظر آتا ہے۔ سعودی عرب میں گزشتہ چند ماہ میں ہوئے دھماکوں سے وہاں آئی ایس کی سرگرمی بڑھنے کی واضح نشانیاں ہیں۔ آئی ایس نے مسجدوں میں ہونے والے دھماکوں کی ذمہ داری بھی لی ہے۔ ان حملوں کے بعد اب مکہ مدینہ میں حج کے دوران حملے کرنے کا خدشہ بھی ظاہر کیا گیا ہے جس کے پیش نظر سعودی حکومت نے حاجیوں سے محتاط رہنے کے لئے کہا ہے۔


متحدہ عرب امارات نے چار ہندوستانی شہریوں کو آئی ایس سے تعلقات کے شبہ میں حال ہی میں ہندوستان واپس بھیجا تھا۔ اطلاعات کے مطابق کچھ مزید ہندوستانیوں کی بھی وہاں کی سیکورٹی ایجنسیوں کی طرف سے سخت نگرانی کی جارہی ہے۔ ان کے خلاف یہ کارروائی آئی ایس سے منسلک پروموشنل مواد سوشل میڈیا پر پوسٹ کرنے کے شک میں کی گئی۔ سعودی عرب میں بھی حکومت کچھ ہندوستانی شہریوں پر آئی ایس سے منسلک ہونے کے شک میں نظر رکھے ہوئے ہے۔


رپورٹوں میں کہا گیا ہے کہ آئی ایس سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات میں بڑے پیمانے پر بھرتی مہم چلانے کا منصوبہ بنا رہا ہے۔ اس کے لئے وہ اس نظریے سے ہمدردی رکھنے والے خاص طور پر پڑھے لکھے لوگوں کو اپنی طرف متوجہ کر رہا ہے۔ اس مہم میں اس کا دھیان ہندوستانی شہریوں پر سب سے زیادہ ہے۔


انٹیلی جنس ایجنسیوں کو پتہ چلا ہے کہ آئی ایس کو سوشل میڈیا پر خفیہ طور پر فعال بلاگوں اور چیٹنگ کی ویب سائٹ پر اچھی خاصا حمایت مل رہی ہے۔ آئی ایس ایک مثالی ریاست کے قیام کی بات کہہ کر لوگوں کو اپنے ساتھ شامل کر رہا ہے۔ اس کے لئے اس نظریے کو پھیلانے والے نام نہاد پروموشنل انجینئر اور ڈاکٹروں کی طرح تعلیم یافتہ لوگوں کو بھی اپنے قریب لا رہا ہے۔ یہ لوگ پڑھے لکھے نوجوانوں کو ہجرت کر کے جہاد کے لئے کمر کسنے کی تاکید کرتے ہیں۔ انہیں بتایا جاتا ہے کہ جہاد سے ہی مثالی ریاست قائم کی جا سکتی ہے۔


ذرائع کے مطابق سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کی حکومتیں اگرچہ اب آئی ایس کے خطرے کو اتنی سنجیدگی سے نہیں لے رہی ہوں لیکن وہ اس سلسلے میں مکمل طور مستعد ہیں اور ہندوستان کے ساتھ خفیہ ا اطلاعات بھی اشتراک کر کے اس معاملے میں تعاون کر رہی ہیں۔ ان ممالک نے اسی تعاون کی وجہ سے مبینہ طور پر آئی ایس سے وابستہ لوگوں کو ہندوستان بھیجا ہے۔


ہندوستان میں بھی سیکورٹی اور انٹیلی جنس ایجنسياں اس خطرے کے بارے میں چوکنا ہیں۔ وزارت داخلہ نے حال ہی میں اس مسئلے پر سیکورٹی ایجنسیوں کے ساتھ اعلی سطحی میٹنگ میں صورتحال کا جائزہ لیا ہے اور اس خطرے سے نمٹنے کی حکمت عملی پر وسیع تبادلہ خیال کیا ہے۔

First published: Sep 20, 2015 02:09 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading