ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

وزیر تعلیم کے سامنے جامعہ وائس چانسلر نے اٹھایا میڈیکل پروجیکٹ کا موضوع

وائس چانسلر نے وزیر موصوف سے کہا کہ جامعہ ملیہ اسلامیہ کو میڈیکل کالج کم اسپتال کے قیام کے لئے حکومت کے تعاون کی ضرورت ہے کیونکہ یونیورسٹی کے آس پاس کوئی سرکاری اسپتال نہیں ہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ وزارت تعلیم مستقبل قریب میں یونیورسٹی کے اس دیرینہ مطالبے پر غور کرے گی۔

  • Share this:
وزیر تعلیم کے سامنے جامعہ وائس چانسلر  نے اٹھایا میڈیکل پروجیکٹ کا موضوع
وزیر تعلیم کے سامنے جامعہ وائس چانسلر نے اٹھایا میڈیکل پروجیکٹ کا موضوع

نئی دہلی۔ پارلیمنٹ اجلاس کے دوران ممبر پارلیمنٹ کنور دانش علی نے مرکزی وزارت تعلیم پر جامعہ ملیہ اسلامیہ میڈیکل کو لے کر معاملے کو لٹکائے جانے اور فنڈنگ کے معاملے  میں جامعہ کے ساتھ ناانصافی کا موضوع اٹھایا تھا۔ اب جامعہ ملیہ اسلامیہ کی وائس چانسلر نجمہ اختر نے براہ راست وزیر تعلیم کے سامنے جامعہ کے میڈیکل پروجیکٹ میں حکومت سے تعاون کی درخواست کی ہے۔ جامعہ ملیہ اسلامیہ کی اسکولی عمارت کے آن لائن افتتاح کے موقع پر نجمہ اختر نے وزیر تعلیم رمیش پوکھریال نشنک کی توجہ مبذول کرائی جس پر وزیر کی جانب سے وزارت میں غور کرنے کی یقین دہانی کرائی گئی ہے۔


وائس چانسلر نے وزیر موصوف سے کہا کہ جامعہ ملیہ اسلامیہ کو میڈیکل کالج کم اسپتال کے قیام کے لئے حکومت کے تعاون کی ضرورت ہے کیونکہ یونیورسٹی کے آس پاس کوئی سرکاری اسپتال نہیں ہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ وزارت تعلیم مستقبل قریب میں یونیورسٹی کے اس دیرینہ مطالبے پر غور کرے گی۔ یونیورسٹی کا عملہ اور آس پاس کے علاقوں میں رہنے والے افراد کووڈ کے وقت خاص طور پر سرکاری اسپتال کی ضرورت محسوس کررہے ہیں۔ مرکزی وزیر نے وائس چانسلر کو یقین دہانی کرائی کہ وہ یونیورسٹی کی مزید ترقی کے لئے ان کی طرف سے طلب کی جانے والی ہر درخواست پر ان کی وزارت غور کرے گی۔


اس سے قبل مرکزی وزیر تعلیم جناب رمیش پوکھریال 'نشنک' نے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ فیکلٹی آف ایجوکیشن جامعہ ملیہ اسلامیہ کی نئی تعمیر شدہ عمارت کا افتتاح کیا۔ یہ عمارت پنڈت مدن موہن مالویہ نیشنل مشن اسکیم (پی ایم ایم ایم این ایم ٹی ٹی) کے تحت فراہم کردہ گرانٹ کے ذریعے تعمیر کی گئی ہے۔ وائس چانسلر جامعہ ملیہ اسلامیہ پروفیسر نجمہ اختر نے ڈین آف فیکلٹی ، شعبہ جات کے سربراہان ، رجسٹرار اے پی صدیقی (آئی پی ایس) ، کنٹرولر امتحانات ڈاکٹر ناظم ایچ جعفری ، اساتذہ اور دیگر عملہ کے ممبران کی موجودگی میں مہمان خصوصی کا استقبال کیا۔


وائس چانسلر نے  کہا کہ جامعہ ملیہ اسلامیہ نئی ایجوکیشن پالیسی (این ای پی) 2020 کے منصوبوں اور پروگراموں کو عملی جامہ پہنانے کے لئے اپنی پوری کوشش کرے گی جو کہ فطری اعتبار سے مکمل اور کثیر الشعبہ ہے۔ نئی تعلیمی پالیسی طلباء کے لئے اعلی تعلیم کے شعبے میں نئے مواقع پیدا کرے گی۔ وزیر تعلیم رمیش پوکھریال’نشنک‘نے جامعہ برادری کو نئی عمارت کے لئے مبارکباد پیش کی۔ اپنے خطاب میں انہوں نے کہا کہ جامعہ اپنے صدی سال میں داخل ہو چکی ہے اور یہ ہم سب کے لئے افتخار کی بات ہے کہ تمام ترچیلنجوں کا سامنا کرتے ہوئے یہ ادارہ ملک کے اعلی دانش گاہوں میں نمایاں مقام بنا چکا ہے۔ انہوں نے اس کامیابی کا سہرا یونیورسٹی کے اساتذہ کو دیا۔

یونیورسٹی امور کی انتظامیہ میں وائس چانسلر پروفیسر نجمہ اختر اور ان کی ٹیم کی کاوشوں کی تعریف کرتے ہوئے پوکھریال نے کہا کہ وقت ضائع کیے بغیر جامعہ مشن کے انداز پر کام کر رہی ہے اور اچھے نتائج ان کوششوں کی عکاس ہیں۔ انہوں نے امید کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ جامعہ مستقبل میں بھی امید کا مرکز بنی رہے گی۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Sep 29, 2020 08:21 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading