ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : ضلع رامبن میں فیس بک پر شخص نے کر ڈالی قابل اعتراض پوسٹ، پولیس نے کیا گرفتار

جموں و کشمیر میں مذہبی ہم آہنگی کو ٹھیس پہنچانے والے سماج مخالف عناصر کی جانب سے سوشل میڈیا پر قابل اعتراض بیان اور پوسٹ کرنے کا سلسلہ مسلسل جاری ہے جس کی وجہ سے جموں و کشمیر میں ماحول کو بگاڑنے کی کوشش کی جارہی ہے۔

  • Share this:
جموں و کشمیر : ضلع رامبن میں فیس بک پر شخص نے کر ڈالی قابل اعتراض پوسٹ، پولیس نے کیا گرفتار
JK Police

جموں و کشمیر میں مذہبی ہم آہنگی کو ٹھیس پہنچانے والے سماج مخالف عناصر کی جانب سے سوشل میڈیا پر قابل اعتراض بیان اور پوسٹ کرنے کا سلسلہ مسلسل جاری ہے جس کی وجہ سے جموں و کشمیر میں ماحول کو بگاڑنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ تاہم جموں و کشمیر پولیس کے متحرک کردار کی ہمیں سراہنا کرنی چاہئے کہ پولیس کی بروقت کاروائی نے ہمشیہ ماحول کو مزید بگڑنے سے بچایا ہے اور عوام نے بھی صبر اور تحمل کے ساتھ امن وقانون کی پاسداری کرتے ہوئے ملزمان کو قانونی شکنجے میں لیکر سخت سزا دینے کا مطالبہ کیا ہے تاکہ جموں و کشمیر کے پر امن ماحول میں کوئی رخنہ نہ پڑے۔


وہیں جو لوگ جموں و کشمیر کی امن کی فضا کو اپنے گندے عزائم سے نقصان پہنچانے کی ذہنیت رکھتے ہوں ان کے ارادوں پر جموں پولیس نے ایک بار پھر سے پانی پھیر دیا جو نہایت ہی قابل ستائش قدم ہے۔


واضح رہے کہ ضلع رامبن کے بٹوت چھانپہ علاقے سے فیس بک پر قابل اعتراض پوسٹ کرنے والے شخص کو پولیس نے گرفتار کر کے اس کے خلاف قانونی کاروائی شروع کر دی ہے۔ گرفتار شدہ شخص کی شناخت محمد زاہد ولد عبدالرشید راتھر ساکنہ چھانپا بٹوت کے طور پر ہوئی ہے۔ جموں پولیس نے ایک شخص کو سوشل میڈیاپر قابل اعتراض تبصرہ پوسٹ کرنے کے پاداش میں گرفتار کیا ہے۔


جموں زون پولیس کے انسپکٹر جنرل مکیش سنگھ نے اپنے ٹویٹر ہینڈل کے مطابق بٹوت علاقے کے ایک شخص نے اپنے فیس بک اکاؤنٹ پر ایسا تبصرہ پوسٹ کیا تھا جس سے ایک مخصوص طبقے کے مذہبی جذبات مجروح ہوئے تھے جس کے پاداش میں مذکورہ شخص کو گرفتار کیا گیا ہے۔گرفتار شدہ شخص کی شناخت محمد زاہد ولد عبدالرشید راتھر ساکنہ چمپا بٹوت کے بطور ہوئی ہے۔ زاہد کے خلاف پولیس اسٹیشن بٹوت میں دفعہ 295 اے اور دفعہ 153 اے کے تحت کیس درج کیا گیا ہے اور اس ضمن میں مزید تحقیقات کی جا رہی ہیں۔
Published by: sana Naeem
First published: Aug 21, 2020 03:53 PM IST