ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

اسپتال انتظامیہ کی حاملہ خاتون کے ساتھ انتہائی شرمناک حرکت، سرراہ دروازے پر خاتون نے دیا بچے کو جنم: جانیں پورا معاملہ

بانڈی پورہ سے ایک دل دہلا دینے والا معاملہ سامنے آیا ہے۔ دراصل ایک دور دراز علاقے سے آئی خاتون نے اسپتال کے گیٹ پر بچے کو جنم دیا ۔ خاتون کے اہل خانہ کے مطابق اسپتال انتظامیہ نے اس خاتون کووڈ 19 پازیٹیو قرار دے کر اسے اسپتال میں داخل نہیں کیا جبکہ ہسپتال انتظامیہ نے روایت کے مطابق ان الزامات کو مسترد کردیا ہے۔

  • Share this:
اسپتال انتظامیہ کی حاملہ خاتون کے ساتھ  انتہائی شرمناک حرکت، سرراہ دروازے پر خاتون نے دیا بچے کو جنم: جانیں پورا معاملہ
بانڈی پورہ سے سامنے آئی سنسنی خیز خبر

بانڈی پورہ سے ایک دل دہلا دینے والا معاملہ سامنے آیا ہے۔ دراصل ایک دور دراز علاقے سے آئی خاتون نے اسپتال کے گیٹ پر بچے کو جنم دیا ۔ خاتون کے اہل خانہ کے مطابق اسپتال انتظامیہ نے اس خاتون کووڈ 19 پازیٹیو قرار دے کر اسے اسپتال میں داخل نہیں کیا جبکہ ہسپتال انتظامیہ نے روایت کے مطابق ان الزامات کو مسترد کردیا ہے۔ دوسری جانب محکمہ صحت کے ساتھ ساتھ ضلع انتظامیہ نے اس معاملے کی تحقیقات کا حکم دے دیا ہے ۔ تفصیلات کے مطابق بانڈی پورہ ضلع اسپتال میں ایک خاتون نے آج اسپتال کے دروازے پر سر راہ ایک بچے کو جنم دیا۔ اس واقعے کو لیکر خاتون کے رشتہ داروں نے اسپتال انتظامیہ پر لاپرواہی کا الزام لگایا ہے ت وہیں اسپتال انتظامیہ نے اس الزام کی تردید کی ۔


کہا جارہا ہے کہ بانڈی پورہ کے وے ون علاقے سے تعلق رکھنے والی ایک خاتون جب ضلع اسپتال پہنچی تو اسپتال انتظامیہ کے مطابق خاتون کورونا وائرس پازیٹیو پائی گئی اور اسے حاجن میں کووڈ مریضوں کے لئے قائم کئے گئے اسپتال منتقل کرنے کا عمل شروع کیا گیا۔ تاہم ایمبولینس میں بیٹھنے سے پہلے ہی خاتون نے اسپتال کے احاطے میں بچے کو جنم دیا۔ ادھر خاتون کے رشتہ داروں کا کہنا تھا کہ اسپتال انتظامیہ کی جانب سے برتی گئی لاپرواہی کی وجہ سے خاتون نے سر راہ بچے کو جنم دیا ہے اور ایمرجینسی کا معاملہ ہونے کے باوجود بھی انہیں یہاں سے 30 کلو میٹر دور اسپتال منتقل ہونے کو کہا گیا۔ یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ انتظامیہ نے ضلع ہیڈ کوارٹر سے 30 کلو میٹر کی دوری پر واقع حاجن علاقے میں ایک صحت مرکز کو کووڈ 19 پازیٹیو حاملہ خواتین کی زچگی کے لئے مختص رکھا ہے۔

ادھر اسپتال انتظامیہ کا کہنا ہے کہ کووڈ پازیٹیو پائے جانے کے بعد اس خاتون کو حاجن منتقل کرنے کی کاروائی چل ہی رہی تھی کہ اس خاتون نے بچے کو اسپتال احاطے میں جنم دے دیا اس ساری بد نظمی کا ایک پہلو یہ ہے کہ ایک جانب میڈیکل سپریٹنڈنٹ اس معاملے میں صفائی دے رہے ہیں مگر دوسری جانب سی ایم او بانڈی پورہ نے میڈیکل سپریٹنڈنٹ کے خلاف ایک تیز طرار وجہ بتاؤ نوٹس جاری کرکے دو خاتون ڈاکڑوں کے ساتھ ساتھ ایک مرد ڈاکٹر اور میڈیکل سپریٹنڈنٹ کی تنخواہ نکالنے پر روک لگانے کا حکم جاری کیا جبکہ ضلع انتظامیہ نے بھی اس پورے معاملے کی جانچ کا حکم جاری کیا ہے۔


تحقیقاتی رپورٹ کچھ بھی ہو تاہم یہ سوال اپنی جگہ پر کھڑا ہے کہ ضلع ہیڈ کوارٹر سے 30 کلو میٹر کی دوری پر کووڈ پازیٹیو حاملہ خواتین کے لئے صحت مرکز قائم کرنے کا فیصلہ کیون لیا گیا ہے اور ایمرجینسی کا کیس ہونے کے باوجود بھی اس خاتون کی زچگی ضلع اسپتال میں ہی کیوں نہیں کرائی گئی ۔
Published by: sana Naeem
First published: Nov 14, 2020 06:14 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading