ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

جموں و کشمیر کی سیاسی پارٹیوں سے ملاقات کے بعد اب مرکزی حکومت نے کارگل اور لداخ کی پارٹیوں کو کیا مدعو

Ladakh Kargil Party Center Meeting: پانچ اگست 2019 کو جموں و کشمیر سے آرٹیکل 370 کے زیادہ تر الترامات کو ہٹائے جانے کے بعد ریاست کو مرکز کے زیر انتظام دو حصوں میں تقسیم کردیا گیا تھا ۔

  • Share this:
جموں و کشمیر کی سیاسی پارٹیوں سے ملاقات کے بعد اب مرکزی حکومت نے کارگل اور لداخ کی پارٹیوں کو کیا مدعو
وزیر اعظم نریندر مودی نے 24 جون کو جموں و کشمیر کے سابق وزرائے اعلی سمیت آٹھ مختلف پارٹیوں کے 14 لیڈروں کے ساتھ تقریبا ساڑھے تین گھنٹوں تک میٹنگ کی ۔ (Narendra Modi Twitter/24 June 2021)

نئی دہلی : جموں و کشمیر کی سبھی پارٹیوں کے ساتھ وزیر اعظم مودی کی دہلی میں ملاقات کے بعد اب مرکز نے یکم جولائی کو کارگل اور لداخ کی سبھی پارٹیوں اور سول سوسائٹی کے اراکین کو مدعو کیا ہے ۔ سابق ممبر پارلیمنٹ اور سول سوسائٹی کے اراکین کو بھی اس ملاقات کیلئے دعوت نامہ بھیجا گیا ہے ۔ یہ میٹنگ داخلی امور کے مرکزی وزیر مملکت کشن ریڈی کی قیادت میں ان کی رہائش گاہ پر یکم جولائی کو صبح گیارہ بجے ہوگی ۔


غور طلب ہے کہ وزیر اعظم نریندر مودی نے 24 جون کو جموں و کشمیر کے سابق وزرائے اعلی سمیت آٹھ مختلف پارٹیوں کے 14 لیڈروں کے ساتھ تقریبا ساڑھے تین گھنٹوں تک میٹنگ کی تھی ، جس میں زیادہ تر لیڈروں نے مکمل ریاست کا درجہ بحال کرنے اور اسمبلی انتخابات کرانے کا مطالبہ کیا ۔ خیال رہے کہ پانچ اگست 2019 کو جموں و کشمیر سے آرٹیکل 370 کے زیادہ تر الترامات کو ہٹائے جانے کے بعد ریاست کو مرکز کے زیر انتظام دو حصوں میں تقسیم کردیا گیا تھا ۔


وزیر اعظم نے میٹنگ کرکے گفتگو اور تبادلہ خیال کو جمہوریت کی بڑی مضبوطی قرار دیتے ہوئے کہا کہ میں نے جموں و کشمیر کے لیڈروں سے کہا کہ لوگوں کو خاص کر نوجوانوں کو جموں و کشمیر میں سیاسی قیادت دینا ہے اور ان کے خواہشات کی تکمیل کو یقینی بنانا ہے ۔


وزیر اعظم نے کہا کہ وہ دلی کی دوری کے ساتھ ہی دل کی دوریوں کو بھی مٹانا چاہتے ہیں ۔ ذرائع کے مطابق وزیر اعظم نے ڈی ڈی سی کے انتخاات کامیاب طریقہ سے اختتام پذیر ہونے کی طرح ہی وہاں اسمبلی انتخابات کرانے پر زور دیا ۔ انہوں نے جموں و کشمیر کی رفتار پر اطمینان کا اظہار کیا اور کہا کہ اس سے جموں و کشمیر کے لوگوں میں خواہشات کو لے کر امید کی کرن جاگ رہی ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jun 26, 2021 11:56 PM IST