ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

وزیر اعلی محبوبہ مفتی کی پولیس کو جنگجووں کے اہل خانہ کو نشانہ بنانے سے اجتناب کرنے کی ہدایت

جموں وکشمیر کی وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے ریاستی پولیس سے کہا ہے کہ وہ جنگجوؤں کے افراد خانہ کو نشانہ بنانے سے اجتناب کریں۔

  • UNI
  • Last Updated: Oct 25, 2017 04:08 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
وزیر اعلی محبوبہ مفتی کی پولیس کو جنگجووں کے اہل خانہ کو نشانہ بنانے سے اجتناب کرنے کی ہدایت
جموں وکشمیر کی وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی: فائل فوٹو

سری نگر: جموں وکشمیر کی وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے ریاستی پولیس سے کہا ہے کہ وہ جنگجوؤں کے افراد خانہ کو نشانہ بنانے سے اجتناب کریں۔ قابل ذکر ہے کہ جنوبی کشمیر بالخصوص ترال میں گذشتہ دو ہفتوں کے دوران سیکورٹی فورسزکے ہاتھوں جنگجوؤں اور جنگجوؤں کے ہاتھوں پولیس اہلکاروں و سیاسی کارکنوں کے گھروں میں توڑ پھوڑ اور مکینوں کی پٹائی کے متعدد واقعات سامنے آئے ۔

محترمہ مفتی نے بدھ کو وسطی کشمیر کے ضلع گاندربل کے منی گام میں واقع پولیس ٹریننگ اسکول میں پولیس اہلکاروں سے خطاب کرتے ہوئے کہا ’جنگجوؤں کے ہاتھوں پولیس اہلکاروں کے افراد خانہ کو نشانہ بنایا جارہا ہے۔ پولیس اہلکاروں کو جنگجوؤں کا طریقہ استعمال نہیں کرنا چاہیے‘۔ انہوں نے کہا کہ ریاستی پولیس کو کئی چیلنجوں کا سامنا ہے۔ وزیر اعلیٰ نے پولیس اہلکاروں سے کہا کہ وہ مقامی جنگجوؤں کی خودسپردگی کو یقینی بنائیں۔

حزب المجاہدین کے آپریشنل کمانڈر ریاض نائیکو کا ایک آڈیوبیان منگل کو وادی میں سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پر نمودار ہوا جس میں انہوں نے فوج اور پولیس کے اہلکاروں سے کہا کہ وہ جنگجوؤں کے افراد خانہ کو نہ ستائیں۔ ریاض نائیکو کو آڈیو میں یہ کہتے ہوئے سنا جاسکتا ہے ’ہم فوج اور پولیس سے کہتے ہیں کہ آپ کی جنگ ہمارے ساتھ ہے۔ آپ ہم سے لڑنے کے لئے جتنی طاقت اور ٹیکنالوجی استعمال کرنا چاہتے ہیں، کرسکتے ہیں۔ لیکن ہمارے گھر والوں نے آپ کا کیا بگاڑا ہے۔ بندوق ہم نے اٹھائی ہے، ہمارے گھر والوں نے نہیں۔ یہ بات یاد رکھنا کہ اگر آج کے بعد کسی بھی مجاہد (جنگجو) کے گھر والے کو ستایا گیاتو ایس پی او سے لیکر ایس پی تک اور چھوٹی ورکر سے لیکر چیف منسٹر تک کوئی محفوظ نہیں رہے گا‘۔

First published: Oct 25, 2017 04:08 PM IST