ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

جموں وکشمیر: جموں میں بی جے پی کا دبدبہ، وادی میں بھی کئی مقامات پرکھلا کمل، لداخ میں کانگریس نے بازی ماری

الیکشن افسران نے بتایا کہ اس علاقے میں کل 26 وارڈوں میں سے کانگریس نے لیہہ نگرپالیکا سمیتی میں سبھی 13 سیٹوں پرجیت درج کی ہے۔

  • Share this:
جموں وکشمیر: جموں میں بی جے پی کا دبدبہ، وادی میں بھی کئی مقامات پرکھلا کمل، لداخ میں کانگریس نے بازی ماری
جموں وکشمیر میں بلدیاتی انتخابات کے لئے ووٹنگ ہوئی تھی۔

جموں وکشمیر کے بلدیاتی انتخابات میں لداخ میں بی جے پی کا صفایا ہوگیا ہے۔ وہیں جموں میں بی جے پی کا میئربنے گا۔ کشمیر وادی میں بھی بی جے پی کے لئے اچھی خبرہے اوراس نے 21 سیٹیں جیتی ہیں۔ واضح رہے کہ پی ڈی پی اورنیشنل کانفرنس نے ان الیکشن میں حصہ نہیں لیا تھا۔


بی جے پی لداخ میں اپنا کھاتہ کھولنے میں ناکام رہی۔ الیکشن افسران نے بتایا کہ اس علاقے میں کل 26 وارڈوں میں سے کانگریس نے لیہہ نگرپالیکا سمیتی میں سبھی 13 سیٹوں پرجیت درج کی ہے۔ پارٹی نے قریب کے کارگل ضلع میں بھی پانچ وارڈوں میں جیت حاصل کی ہے۔ افسران نے بتایا کہ علاقے میں 6 سیٹوں پر آزاد امیدواروں نے جیت حاصل کی۔ صرف دو سیٹوں کے نتائج نہیں آئے ہیں۔


لداخ لوک سبھا سیٹ سے بی جے پی تھپستان چھیوانگ ممبرپارلیمنٹ ہیں۔ حالانکہ 2014 میں ریاست میں ہوئے اسمبلی انتخابات میں اس پارلیمانی سیٹ کے چار اسمبلی حلقوں میں سے تین پرکانگریس نے جیت درج کی تھی۔ چوتھی اسمبلی سیٹ پرایک آزاد ممبراسمبلی نے جیت درج کی تھی۔ جموں میونسپل کارپوریشن کے الیکشن میں بی جے پی نے 43 سیٹ جیتی ہے۔ کانگریس کو 14 اورآزاد امیدواروں کو 18 وارڈوں میں جیت ملی ہے ۔ یہاں پرکل 75 وارڈ تھے۔




وہیں کشمیروادی میں بی جے پی نے دہشت گرد متاثرہ چاراضلاع میں 132 میں سے 53 وارڈ جیتے ہیں۔ اسی وجہ سے 20  باڈی میں سے کم از کم چار میں اس کا بورڈ بنے گا۔ ان میں اننت ناگ، کلگام، پلوامہ اورشوپیاں شامل ہے۔ وہیں کانگریس نے تین کارپوریشن میں جیت حاصل کی ہے۔ شوپیاں میں بھی بی جے پی کی کارکردگی اچھی رہی۔ یہاں پراس کے 12 امیدواربلامقابلہ جیتے۔ دیوسار میں اس نے سبھی 8 سیٹیں جیت لیں، اسی طرح سے قاضی گنڈ میں اسے سات میں چار، پہلگام میں 13 میں سے سات سیٹیں ملیں۔ باقی سیٹوں پرکوئی امیدوارکھڑا نہیں ہوا۔

کانگریس نے درو کارپوریشن میں بڑی جیت درج کی۔ یہاں اسے 17 میں سے 14 سیٹیں ملیں۔ بی جے پی کو دو سیٹ ملی، اسی طرح کوکرناگ میں 8 میں سے 6، یاری پورہ میں 6 میں سے تین سیٹ کانگریس نے جیتی۔ بنی ہال میں سبھی سیٹوں پرکانگریس کا جھنڈا لہرایا۔ بھدرواہ بھی کانگریس کے پالے میں گیا۔ کٹھوعہ اورہیرا نگر میں بی جے پی نے کامیابی حاصل کی۔  گندربل میں آزاد امیدوارں کا دبدبہ رہا۔

واضح رہے کہ 13 سال بعد ریاست میں ہونے والے میونسپل انتخابات، چارمرحلوں میں منعقد کئے گئے تھے، جس میں تقریباً 17 لاکھ رائے دہندگان کے ساتھ 79 میونسپل کارپوریشن کو شامل کیا گیا تھا۔ 1145 وارڈ کے لئے کل 3372 نامزدگی ہوئی اور 8,10, 13 اور 16 اکتوبرکوووٹ ڈالے گئے۔ کشمیروادی میں جہاں ووٹنگ کا تناسب کافی کم رہا تو جموں اور لداخ میں زبردست ووٹنگ ہوئی۔ کشمیر کے 598 وارڈ میں سے 231 امیدواربلامقابلہ منتخب ہوئے جبکہ 181 سیٹوں پرکوئی کھڑا نہیں ہوا۔ پورے ریاست میں ووٹنگ فیصد 35.1 فیصد رہا۔

یہ بھی پڑھیں:  جموں وکشمیر: پروفیسرسیف الدین سوز نے کشمیر میں بلدیاتی انتخابات کو"دکھاوے کے انتخابات" قراردیا

یہ  بھی پڑھیں:     ایس پی وید تبدیل، دلباغ سنگھ ریاست کےعبوری پولیس سربراہ تعینات

یہ بھی پڑھیں: جموں وکشمیر ریاست ہندوستان میں نہ ضم ہوئی اور نہ ہوگی: فاروق عبداللہ
First published: Oct 20, 2018 08:44 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading