உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سری نگر: پیلٹ گن کی شکار ہوئی 18 ماہ کی حبا، شاید ہی لوٹے آنکھوں کی روشنی

    کشمیر: فائل فوٹو

    کشمیر: فائل فوٹو

    جموں و کشمیر میں پیلٹ گن کی گولی کی شکار ہوئی 18 ماہ کی بچی حبا نثار کی دائیں آنکھ میں سرجری کے بعد اسپتال سے چھٹی مل گئی ہے۔

    • Share this:
      جموں و کشمیر میں پیلٹ گن کی گولی کی شکار ہوئی 18 ماہ کی بچی حبا نثار کی دائیں آنکھ میں سرجری کے بعد اسپتال سے چھٹی مل گئی ہے۔ لیکن ڈاکٹروں کو ابھی یہ نہیں پتہ ہے کہ اس کی آنکھوں کی روشنی پوری طرح سے واپس آئے گی یا نہیں۔ شوپیاں کی رہنے والی حبا کی والدہ مرسلہ جان کہتی ہیں کہ جب سکیورٹی اہلکاروں اور احتجاجیوں کے درمیان جھڑپ ہوئی، اس وقت ان کی بچی گھر کے اندر کھیل رہی تھی۔
      یہ جھڑپ اتوار کے روز ایک تصادم میں چھ دہشت گردوں کو مارے جانے کی مخالفت میں ہوئی تھی۔ مرسلہ جان کہتی ہیں، ’’دہشت گردوں اور فوج کے درمیان کا تصادم ہمارے گھر سے کافی دور ہوا تھا لیکن یہ جھڑپ ہمارے گھر کے قریب میں ہوئی۔ پہلے ہمارے آس پاس آنسو گیس کا غبار پھیل گیا جس سے حبا کو کھانسی آنے لگی، اس کے بعد ایک تیز آواز آئی، حبا کی آنکھ میں پیلٹ گن کی گولی لگ گئی۔ یہ گولی گھر کی جانب چلا ئی گئی تھی‘۔

      ایس ایم ایچ ایس اسپتال کے ڈاکٹروں نے بتایا کہ حبا کی آنکھ پوری طرح زخمی ہو گئی تھی اس کی سرجری کی گئی۔ حبا کی سرجری کرنے والے سرجن نے بتایا، ’’ اس بات کی کوئی گارنٹی نہیں ہے کہ اس کی آنکھوں کی پوری روشنی لوٹ آئےگی‘‘۔ ان کا کہنا ہے کہ اس علاج کا عمل بہت طویل ہے اورحبا کے والدین کو بہت احتیاط کرنا ہوگا جس سے بچی کو کسی طرح کی پریشانی نہ ہو۔
      First published: