உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    واجپئی کی طرح پاکستان سے بات کریں مودی،جنگ سے کوئی حل نہیں،ہمارے بچے مر رہے ہیں:محبوبہ مفتی

    جموں وکشمیر کی وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی

    جموں کشمیر کی وزیر اعلی محبوبہ مفتی نے ہفتے(سنیچر) کو کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کو واجپئی حکومت کی طرح پاکستان سے بات کرنی چاہئے۔اسی سے دونوں ملکوں کے درمیان امن کا راستہ نکلے گا۔

    • Share this:
      جموں کشمیر کی وزیر اعلی محبوبہ مفتی نے ہفتے(سنیچر) کو کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کو واجپئی حکومت کی طرح پاکستان سے بات کرنی چاہئے۔اسی سے دونوں ملکوں کے درمیان امن کا راستہ نکلے گا۔کشمیری پنڈتوں کے ایک پروگرام میں محبوبہ نے کہا کہ جس طرح سے واجپئی نے پاکستان کے ساتھ بات چیت کی تھی ویسے ہی مودی حکومت کو بھی کرنا چاہئے۔پاکستان سے کہنا چاہئے کہ کشمیر میں دہشت گرد بھیجنا بند کرے۔سو کے بدلے چار مارنے کی بات ہوتی ہے لیکن ہمارے بچے مر رہے ہیں۔

      انہوں نے کہا کہ جنگ ہونی تو اٹل جی کے وقت ہی ہوجاتی لیکن دونوں ملک سمجھتے ہیں کہ جنگ سے کوئی حل نہیں نکلتا ہے نہ تو ہم اور نہ پاکستان جنگ لڑنے کی حالت میں ہے۔دونوں ملک جانتے ہیں کہ اگر جنگ ہوئی تو کچھ نہیں بچے گا۔دونوں ملک سب کچھ کھو دیں گے۔ٹیلی وژن پر جو لوگ رات کو بیٹھتے ہیں اور کہتے ہیں کہ سبق سکھا ئیں گے ،وہ کوئی سبق نہیں سکھیا جا رہا ہے۔سبق وہاں ہمیں سکھایا جا رہا ہے۔۔۔ہمارے لوگ ر رہے ہیں۔

      محبوبہ نے امن قائم کرنے کرنے کی بات کہتے ہوئے کہا کہ جبجنگ نہیں ہونی ہے تو دونوں جانط سے راستے کھلنے چاہئیں۔بات چیت ہونی چاہئے،وہاں کے لوگ آ سکیں،ہم جا سکیں صلح ہونی چاہئے۔لوگوں کو دوستانہ ماحول میں رہنا چاہئے۔

      کشمیری پنڈتوں کی حالت پر سی ایم مبوبہ نے کہا کہ کشمیری پنڈت ہمارے ہیں اور کشمیر کا اہم حصہ ہیں۔ان سے کہا کہ وہ یہاں آئیں اور اپنے بچوں کو بھیجیں۔سب ان کو (کشمیر پنڈتوں)بہت یاد کرتے ہیں۔کشمیر کے لوگ بھی یاد کرتے ہیں۔میں نے کہا کہ سبھی تکلیفیں دور کرنے کو تیار ہیں۔پنڈتوں کے بغیر کشمیر نامکمل ہے۔
      First published: