ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

پلوامہ حملہ: کشمیر میں این آئی اے کی چھاپے ماری جاری

کشمیر کے ضلع پلوامہ میں گزشتہ سال سی آر پی ایف کے قافلہ پر دہشت گردانہ حملہ کے تعلق سے این آئی اےکی چھاپے ماری ہفتہ کو دوسرے روزبھی جاری رہی۔ اس حملہ میں سی آر پی ایف کے 40 جوان شہید ہو گئے تھے۔

  • Share this:
پلوامہ حملہ: کشمیر میں این آئی اے کی چھاپے ماری جاری
کشمیر کے ضلع پلوامہ میں گزشتہ سال سی آر پی ایف کے قافلہ پر دہشت گردانہ حملہ کے تعلق سے این آئی اےکی چھاپے ماری ہفتہ کو دوسرے روزبھی جاری رہی۔ اس حملہ میں سی آر پی ایف کے 40 جوان شہید ہو گئے تھے۔

جموں و کشمیر کے ضلع پلوامہ میں گزشتہ سال سی آر پی ایف کے قافلہ پر دہشت گردانہ حملہ کے تعلق سے این آئی اےکی چھاپے ماری ہفتہ کو دوسرے روزبھی جاری رہی۔ اس حملہ میں سی آر پی ایف کے 40 جوان شہید ہو گئے تھے۔ سرکاری ذرائع کے مطابق این آئی اے کے افسران نے ضلع پلوامہ کے بکری پورا اور حاجی بَل میں دہشت گردوں کے گھروں پر چھاپہ مارا۔ این آئی اے افسروں نے جمعہ کو جیش محمد کے دہشت گرد شاکر بشیر ماگرے کو گرفتار کیا تھا۔


ماگرے گزشتہ سال اونتی پورہ میں سری نگر -جموں قومی شاہراہ پر سی آر پی ایف جوانوں کی گاڑی سے آر ڈی ایکس بھری کار کو ٹکرانے والے دہشت گرد عادل احمد ڈار کی مدد کا الزام ہے۔ شاکر حاجی بل کا رہائشی ہے اور اس نے پلوامہ میں مبینہ طور پر دہشت گردوں کو پناہ دی اور مدد فراہم کی تھی۔


قابل ذکر ہے کہ پولیس اور سلامتی دستوں نے دعویٰ کیا ہے کہ اس معاملہ میں شامل تمام دہشت گردوں کو مختلف مقابلوں میں مار دیا گیا ہے۔ این آئی اے نے اس معاملہ کو اپنے ہاتھ میں لینے کے بعد سے وادی میں چھاپہ مار کر کئی دہشت گردوں کو گرفتار کیا ہے۔

First published: Feb 29, 2020 03:53 PM IST