ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

جاٹ تحریک: دلال کھاپ پنچایت کا فیصلہ، حکومت کے کسی نمائندہ کو گاؤں میں نہیں گھسنے دیں گے

جاٹ برادری کے لیڈروں کے ایک گروپ نے ریزرویشن کے لئے آج سے دوبارہ احتجاج شروع کرنے کا اعلان کیا ہے ۔

  • Pradesh18
  • Last Updated: Jun 06, 2016 12:54 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
جاٹ تحریک: دلال کھاپ پنچایت کا فیصلہ، حکومت کے کسی نمائندہ کو گاؤں میں نہیں گھسنے دیں گے
جاٹ برادری کے لیڈروں کے ایک گروپ نے ریزرویشن کے لئے آج سے دوبارہ احتجاج شروع کرنے کا اعلان کیا ہے ۔

جاٹ برادری کے لیڈروں کے ایک گروپ  نے ریزرویشن کے لئے آج سے دوبارہ احتجاج شروع کرنے کا اعلان کیا ہے ۔ اعلان کے پیش نظر ہریانہ حکومت اور ریاستی پولیس نے صورت حال سے نمٹنے کے لئے سیکورٹی کے چاق وچوبند انتظامات کئے ہیں ۔ تاہم آج بھی مظاہرہ شروع ہوا ہے ، وہاں امن رہا جبکہ کئی جگہ پر مظاہرہ نہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔


ادھر بہادر گڑھ میں جاٹ ریزرویشن کو لے کر مانڈوٹھی گاؤں میں منعقدہ دلال کھاپ پنچایت نے حکومت کا بائیکاٹ کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔  دلال کھاپ كے 12 گاوں نے فیصلہ کیا ہے کہ حکومت کے کسی بھی نمائندہ کو گھسنے نہیں دیا جائے گا۔ دلال کھاپ پنجایت کا کہنا ہے کہ جاٹ ریزرویشن کا اسٹے ہٹايا جائے، تحریک میں مارے گئے نوجوانوں کو شہید کا درجہ اور ریزرویشن تحریک کے دوران درج مقدمات واپس لئے جائیں ۔  اتنا ہی نہیں گرفتار نوجوانوں کو رہا کیا جائے ۔


گڑگاؤں میں کانگریس کے ریاستی صدر اشوک تنور نے  جاٹ ریزرویشن آندولن پر کہا کہ مظاہرہ آئینی حق ہے ۔ لوگ حکومت کی ناکامیوں اور مستقبل وعدہ خلافیوں کی وجہ سے سڑکوں پر اتر رہے ہیں ۔ حکومت اپنا وعدہ پورا کرتی ، تو ہریانہ كے یہ حالات نہیں هوتے۔  اشوک تنور نے باہمی بھائی چارہ کی اپیل کرتے ہوئے آندولن کے دوران پختہ سیکورٹی انتظامات پر چٹکی لی ۔ انہوں نے کہا کہ اس مرتبہ پختہ سیکورٹی ہے ، تو پچھلی مرتبہ کیا تھی ۔


Haryana Assembly Passes Jat Quota Bill, Police Conduct Flag March

تنور نے کہا کہ پرکاش سنگھ کمیٹی کی رپورٹ حکومت کے دباؤ میں دی گئی تھی ۔  حکومت کے کچھ وزراء نے پرکاش سنگھ کمیٹی پر دباؤ بنا کر رپورٹ کو تیار کرایا ۔ دشینت چوٹالہ کا نام رپورٹ میں بی جے پی لیڈروں کے دباؤ کی وجہ سے شامل کیا گیا ، نہیں تو اتنی بڑی چوک کیسے ہو سکتی ہے ۔

Jat-Agitation-in-haryana-1-1

دریں اثنا جاٹ برادری کی جانب سے آج پھر ہریانہ کے کئی مقامات پر غیر معینہ دھرنا شروع کیے جانے کے پیش نظر دہلی کے سرحدی اضلاع اور دیگر علاقوں میں دفعہ -144 لاگو کرے گی۔  دہلی پولیس کے ایک افسر نے کہا کہ دہلی پولیس ریزرویشن کی مانگ کو لے کر جاٹوں کے مظاہرے سے متاثر ہونے کے خدشہ والے دہلی کے سرحدی اضلاع اور دیگر علاقوں میں دفعہ 144 لگانے کا منصوبہ بنا رہی ہے۔ پولیس خاص طور پر دہلی کے جنوب مغربی ، شمال مغربی اور جنوب مشرقی علاقوں میں یہ حکم نافذ کی تیاری کر رہی ہے۔

Jat-Agitation-in-haryana-3
First published: Jun 06, 2016 12:54 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading