உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ہریانہ میں ایک بار پھر سلگنے لگی جاٹ آندولن کی چنگاری، سیکورٹی ایجنسیاں الرٹ

    نئی دہلی۔ ہریانہ میں ایک بار پھر جاٹ آندولن کی چنگاری سلگنے لگی ہے۔

    نئی دہلی۔ ہریانہ میں ایک بار پھر جاٹ آندولن کی چنگاری سلگنے لگی ہے۔

    نئی دہلی۔ ہریانہ میں ایک بار پھر جاٹ آندولن کی چنگاری سلگنے لگی ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی۔ ہریانہ میں ایک بار پھر جاٹ آندولن کی چنگاری سلگنے لگی ہے۔ جاٹ لیڈروں نے 5 جون سے ایک بار پھر تحریک کی دھمکی دی ہے۔ اسے دیکھتے ہوئے ہریانہ میں سیکورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے ہیں۔ پولیس اور انٹیلی جنس ایجنسیوں کو الرٹ کر دیا گیا ہے۔ ایجنسیوں کو فیس بک، ٹویٹر اور وہاٹس ایپ جیسے سوشل میڈیا پر خاص نظر رکھنے کو کہا گیا ہے۔

      ہریانہ کے 7 حساس اضلاع میں مرکزی فورسز کی تعیناتی کر دی گئی ہے۔ سونی پت میں دفعہ 144 نافذ کر دی گئی ہے۔ سونی پت کے تمام افسروں کی چھٹیاں کینسل کر دی گئی ہیں۔ آندولن کی دھمکی کے مدنظر منک نہر پر سیکورٹی بڑھا دی گئی ہے۔ ادھر جاٹوں نے جھجھر میں مہا پنچایت کر حکومت کے بائیکاٹ کی دھمکی دی ہے۔ جاٹوں کا کہنا ہے کہ ان کی مانگیں نہ مانے جانے پر وہ حکومت کے بائیکاٹ کا فیصلہ بھی کر سکتے ہیں۔

      ادھر دہلی میں اتوار کو جاٹ لیڈروں نے جنتر منتر پر مظاہرہ کیا۔ ان لوگوں نے مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ کے گھر کے باہر بھی دھرنا دیا۔ اس کے بعد جاٹوں کے وفد نے راج ناتھ سنگھ سے ملاقات کر فروری میں ہوئی جاٹ تحریک کے دوران جاٹوں کے خلاف دائر مقدمے واپس لینے کا مطالبہ کیا۔
      First published: