உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کشمیر میں برہان وانی کی برسی کے پیش نظر موبائیل انٹرنیٹ خدمات معطل

    فائل فوٹو

    فائل فوٹو

    وادی کشمیر میں حزب المجاہدین کے سابق کمانڈر برہان مظفر وانی کی دوسری برسی کے پیش نظر موبائیل انٹرنیٹ خدمات معطل کردی گئی ہیں۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      وادی کشمیر میں حزب المجاہدین کے سابق کمانڈر برہان مظفر وانی کی دوسری برسی کے پیش نظر موبائیل انٹرنیٹ خدمات معطل کردی گئی ہیں۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ یہ اقدام امن دشمن عناصر کی جانب سے انٹرنیٹ کے غلط استعمال کو روکنے کے لئے اٹھایا گیا ہے۔ وادی میں انٹرنیٹ خدمات کی معطلی کی وجہ سے مقامی رہائشیوں کے ساتھ ساتھ امرناتھ گھپا کی درشن کے لئے آنے والے یاتریوں کو بھی مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ علاوہ ازیں الیکٹرانک بزنس اور بینکنگ کا نظام پوری طرح سے ٹھپ ہو کر رہ گیا ہے۔ وادی میں موبائیل انٹرنیٹ خدمات ہفتہ کی شام قریب ساڑھے پانچ بجے منقطع کی گئیں۔
      ذرائع نے بتایا کہ یہ خدمات غیرمعینہ مدت تک کے لئے معطل کی گئی ہیں۔ جنوبی کشمیر کے چار اضلاع اننت ناگ، کولگام، شوپیان اور پلوامہ میں موبائیل انٹرنیٹ خدمات ہفتہ کو دوپہر کے وقت ہی منقطع کی گئی تھیں۔ وہاں یہ خدمات ضلع کولگام کے ہاوورہ ریڈونی میں فوج کی احتجاجی مظاہرین پر مبینہ طور پر براہ راست فائرنگ کے نتیجے میں ایک کمسن لڑکی سمیت 3 عام شہریوں کے ہلاک اور قریب آدھ درجن دیگر کے زخمی ہوجانے کے سبب پیدا شدہ کشیدہ صورتحال کے پیش نظر منقطع کی گئیں۔ کشمیر انتظامیہ نے ہفتہ کی صبح برہان مظفر وانی کے آبائی قصبہ ’ترال‘ میں کرفیو نافذ کردیا ۔ کرفیو کے نفاذ کے علاوہ ترال کی طرف جانے والی تمام سڑکوں کو سیل کردیا گیا۔
      واضح رہے کہ کشمیری مزاحمتی قیادت سید علی گیلانی، میرواعظ مولوی عمر فاروق اور محمد یاسین ملک نے برہان وانی کی دوسری برسی کے سلسلے میں 8 جولائی اتوار کے روز ریاست گیر ہڑتال کی اپیل کرتے ہوئے کہا ہے کہ قصبہ ترال میں برہان وانی کے آبائی مقبرے پر جملہ شہدائے کشمیر کے حق میں خراج عقیدت ادا کرنے کے لیے ایک عوامی اجتماع منعقد کیا جائے گا۔ انتظامیہ نے برہان وانی کی دوسری برسی سے قبل کشمیری علیحدگی پسند قائدین، کارکنوں اور مبینہ سنگبازوں کے خلاف پکڑ دھکڑ کی کاروائیاں پہلے ہی تیز کردی ہیں۔
      جہاں حریت کانفرنس (ع) چیئرمین میرواعظ کو جمعہ کی صبح اپنے گھر میں نظربند کردیا گیا، وہیں جموں وکشمیر لبریشن فرنٹ (جے کے ایل ایف) چیئرمین یاسین ملک کو حراست میں لیکر پولیس تھانہ کوٹھی باغ میں مقید کردیا گیا۔ بزرگ علیحدگی پسند راہنما اور حریت کانفرنس (گ) چیئرمین سید علی گیلانی گذشتہ کئی برسوں سے مسلسل اپنے گھر میں نظربند رکھے گئے ہیں۔ دیگر متعدد علیحدگی پسند قائدین اور کارکنوں کے علاوہ درجنوں مبینہ سنگبازوں کو وادی کی مختلف پولیس تھانوں میں بند کردیا گیا ہے۔ دریں اثنا انٹرنیٹ خدمات بند ہوجانے کی وجہ سے صارفین خاص طور پر صحافیوں، طلباء، سیاحوں اور تاجروں کو زبردست مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ خدمات کی معطلی کے باعث مختلف مقامی اور قومی میڈیا اداروں سے وابستہ میڈیا اہلکار اپنی رپورٹیں متعلقہ اداروں تک نہیں پہنچا پارہے ہیں اور نتیجے میں اِن کی معمول کی سرگرمیاں بری طرح سے متاثر ہوکر رہ گئی ہیں۔
      اس کے ساتھ ساتھ امرناتھ گھپا کی درشن کے لئے آنے والے یاتریوں کو بھی شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔وادی میں صارفین کا کہنا ہے کہ انٹرنیٹ خدمات کی معطلی اب وادی میں روز مرہ کا معمول بن چکا ہے۔ وادی میں سیکورٹی اداروں کا ماننا رہا ہے کہ واد ی میں پاکستان نوجوانوں کو احتجاج پر اکسانے کے لئے سماجی رابطوں کی ویب سائٹوں کا بڑے پیمانے پر استعمال کررہا ہے۔ بتادیں کہ برہان مظفر وانی کو 8 جولائی 2017 ء کو جنوبی کشمیر کے ضلع اننت ناگ کے بم ڈورہ ککرناگ میں ایک مختصر جھڑپ کے دوران اپنے دو ساتھیوں کے ساتھ ہلاک کیا گیا تھا۔
      First published: