ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

پلوامہ امتحان مراکزپر مشتبہ دہشت گردوں نے سکیورٹی فورسز پر چلائی گولی ، سرچ آپریشن جاری

حالانکہ راحت کی بات یہ ہے کہ اس حملے میں کوئی زخمی نہیں ہوا۔ واقعے کے بعد فوج نے علاقے کا محاصرہ کر لیا اور تلاشی مہم چلائی جارہی ہے۔

  • Share this:
پلوامہ امتحان مراکزپر مشتبہ دہشت گردوں نے سکیورٹی فورسز پر چلائی گولی ، سرچ آپریشن جاری
جموں وکشمیر میں عالمی وبا کورونا وائرس سے پیش آنے والی اموات اور متاثرہ افراد کی تعداد میں مسلسل اضافے کے چلتے جاری لاک ڈاؤن غیر اعلانیہ کرفیو کی شکل اختیار کرچکا ہے۔ تاہم صورتحال کی سنگینی کے پیش نظر لوگ بھی اپنے گھروں تک ہی محدود رہ کر رضاکارانہ طور پر 'سیول کرفیو' نافذ کرچکے ہیں۔وادی کشمیر جہاں کورونا وائرس کے مہلوکین اور متاثرین کی تعداد بڑھتی ہی چلی جارہی ہے، میں اتوار کو مسلسل 11 ویں روز بھی مکمل لاک ڈؤان جاری رہا۔(تصویر:فائل فوٹو)۔

سری نگر: جموں۔کشمیر کے پلوامی میں منگل کو ہندستانی فوج کی پٹرول پارٹی پر دہشت گردوں نے حملہ کیا۔ یہاں کے دربگام میں واقع بورڈ امتحان سینٹر کے پاس دہشت گردوں نے فائرنگ کی۔ حالانکہ راحت کی بات یہ ہے کہ اس حملے میں کوئی زخمی نہیں ہوا۔ واقعے کے بعد فوج نے علاقے کا محاصرہ کر لیا اور تلاشی مہم چلائی جارہی ہے۔

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ پلوامہ کے دربگام میں دہشت گردوں نے سلامتی فورسزکے گشتی ٹیم پر گولی باری کی۔ سلامتی فورسز نے جوابی کارروائی کی جس کی وجہ سے دونوں جانب سے کچھ دیر تک گولی باری ہوتی رہی۔ گولی باری میں کسی کے زخمی یا ہلاک ہونے کی خبر نہیں ہے۔


انہوں نے بتایا کہ حملے کے بعد دہشت گرد جائے واقع سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔ نزدیک میں واقع کیمپوں سے مزید سلامتی فورسز کو بلایا گیا ہے اور علاقے میں گھیرابندی اور تلاشی مہم شروع کردی گئی ہے۔ واضح رہے کہ سلامتی سز پر حملہ اس دن ہوا ہے جب یورپی یونین کا 23 رکنی پارلیمانی وفد آرٹیکل 370 اور 35 اے منسوخ کئے جانےکے بعدکی صورت حال کا جائزہ لینے کے لئے وادی کشمیر پہنچا ہے۔
First published: Oct 29, 2019 05:45 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading