ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

جے این یو تنازع پراے بی وی پی منقسم ، تین عہدیداروں کا استعفی

نئی دہلی : جے این یو معاملے میں ایک اور نیا موڑ آ گیا ہے ۔ حال ہی میں جے این یو میں مبینہ طور پر ملک مخالف نعروں پر اب بی جے پی کی اسٹوڈنٹ یونٹ اے بی وی پی میں دو حصوں میں تقسیم ہوگئی ہے۔ اے بی وی پی کے جے این یو یونٹ کے جوائنٹ سکریٹری پردیپ نروال نے اپنے عہدے سے استعفی دے دیا ہے ۔

  • Pradesh18
  • Last Updated: Feb 18, 2016 12:41 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
جے این یو تنازع پراے بی وی پی منقسم ، تین عہدیداروں کا استعفی
نئی دہلی : جے این یو معاملے میں ایک اور نیا موڑ آ گیا ہے ۔ حال ہی میں جے این یو میں مبینہ طور پر ملک مخالف نعروں پر اب بی جے پی کی اسٹوڈنٹ یونٹ اے بی وی پی میں دو حصوں میں تقسیم ہوگئی ہے۔ اے بی وی پی کے جے این یو یونٹ کے جوائنٹ سکریٹری پردیپ نروال نے اپنے عہدے سے استعفی دے دیا ہے ۔

نئی دہلی : جے این یو معاملے میں ایک اور نیا موڑ آ گیا ہے ۔ حال ہی میں جے این یو میں مبینہ طور پر ملک مخالف نعروں پر اب بی جے پی کی اسٹوڈنٹ یونٹ اے بی وی پی میں دو حصوں میں تقسیم ہوگئی ہے۔ اے بی وی پی کے جے این یو یونٹ کے جوائنٹ سکریٹری پردیپ نروال نے اپنے عہدے سے استعفی دے دیا ہے ۔


اس کے علاوہ ایس ایس ایس کے اے بی وی پی یونٹ کے صدر راہل یادو اور ایس ایس ایس کے اے بی وی پی یونٹ کے سکریٹری انکت ہنس نے بھی اپنے اپنے عہدوں سے استعفی دے دیا ہے ۔ پردیپ نے اپنی فیس بک وال پر اس کا اعلان کیا ۔


واضح رہے کہ 9 فروری کو جے این یو میں مبینہ طور پرہندوستان کے خلاف لگے نعرے بازی کی گئی تھی ۔ جے این یو تنازعہ نے سوشل میڈیا پربھی لوگوں کو دو حصوں میں تقسیم کر دیا ہے ۔ اے بی وی پی کے جے این یو یونٹ کے جوائنٹ سکریٹری پردیپ نروال کے مطابق مرکزی حکومت نے معاملے سے جس انداز میں نمٹا ہے وہ انتہائی بدقسمتی کی بات ہے اور یہی وجہ ہے کہ وہ اپنے عہدے سے استعفی دے رہے ہیں ۔ اس کے علاوہ انہوں نے اس معاملے میں ایک نیوز چینل پر بھی سنگین الزامات عائد کئے ہیں ۔

First published: Feb 18, 2016 12:41 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading