உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مسلمانوں کی ترقی کے بغیر ہندوستان کی جامع ترقی ممکن ہی نہیں : جسٹس راجندر سچر

    جسٹس راجندر سچر ۔ فائل فوٹو

    جسٹس راجندر سچر ۔ فائل فوٹو

    نئی دہلی۔ ہندوستان میں مسلمانوں کی تعلیمی، سماجی او راقتصادی صورت حال کے سلسلے میں اہم رپورٹ تیار کرنے والے دہلی ہائی کورٹ کے سابق جسٹس راجند رسچر نے آج کہا کہ مسلمانوں کی ترقی کے بغیر ہندوستان کی جامع ترقی ممکن ہی نہیں ہے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      نئی دہلی۔ ہندوستان میں مسلمانوں کی تعلیمی، سماجی او راقتصادی صورت حال کے سلسلے میں اہم رپورٹ تیار کرنے والے دہلی ہائی کورٹ کے سابق جسٹس راجند رسچر نے آج کہا کہ مسلمانوں کی ترقی کے بغیر ہندوستان کی جامع ترقی ممکن ہی نہیں ہے۔ امریکن فیڈریشن آف مسلمس آف انڈین اوریجن (ایفمی) کے پچیسویں بین الاقوامی کنونشن کا افتتاح کرتے ہوئے جسٹس راجندر سچر نے کہا کہ سچر کمیٹی کی رپورٹ محض مسلمانوں کے لیے نہیں تیار کی گئی بلکہ یہ دوسری قوموں کے ساتھ مسلمانوں کا ترقیاتی موازنہ ہے۔ انھوں نے یہ تمنّا ظاہر کی کہ تمام مذاہب کے پیروکار ترقی کریں اور دعوی کیا کہ مسلمانوں کی ترقی کے بغیر ہندوستان کی جامع ترقی ممکن ہی نہیں ہے۔ کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے دہلی کے نائب وزیراعلی منیش سسودیا نے کہا کہ دہلی سرکار تعلیم کے شعبے میں خصوصی کوششیں کررہی ہے۔ حکومت اپنے مجموعی بجٹ کا 25%صرف تعلیم پر ہی خرچ کررہی ہے جو ہندوستان میں کوئی دوسری ریاست نہیں کرتی۔ ہمارا مقصد بچوں میں خوداعتمادی پیدا کرنا اوران کے ہنر کی آبیاری کرنا ہے۔سابق چیف الیکشن کمشنر ڈاکٹر ایس وائی قریشی نے ایفمی کے سووینر ’’دی لیجینڈ‘‘ (The Legend) کا اجرا کیا جو دہلی میں قائم ہندوستان کے قدیم ترین تعلیمی ادارے اینگلوعربک اسکول سے منسوب کیا گیا تھا۔ اس موقع پر سماجی کارکن اے قادربھائی سپاری والا کو سرسید احمد خان ایوارڈ اور اردوزبان و تہذہب کے فروغ کے لیے ریختہ ڈاٹ کام کے بانی سنجیوصراف کو میرتقی میر ایوارڈ سے نوازا گیا۔ ڈاکٹر ایس وائی قریشی کو ایفمی ایکسیلنس ایوارڈ پیش کیا گیا جبکہ اینگلو عربک سینئر سکنڈری اسکول (اجمیری گیٹ) کو ایفمی ایکسیلنس ایوارڈ براے تنظیم سے سرفراز کیا گیا۔ پرنسپل محمد وسیم احمد نے اسکول کی جانب سے یہ ایوارڈ قبول کیا۔


      ایفمی کے بانی ٹرسٹی ڈاکٹر اے ایس ناکیدار نے بتایا کہ ایفمی کے دو روزہ سلورجبلی کنونشن میں پورے ہندوستان کے 135مسلمان طلبا و طالبات کو اعزازات سے سرفراز کیا جائے گا جنھوں نے 2016میں دسویں اور بارہویں جماعت میں سب سے زیادہ نمبر حاصل کیے ہیں۔ دہلی میں ایفمی کے ایونٹ پارٹنر دہلی یوتھ ویلفیئر ایسوسی ایشن (ڈائیوا) کے صدر اور کنونشن چیئرمین محمد نعیم نے اپنے افتتاحی کلمات میں دہلی کے تعلیمی اداروں کے تابناک ماضی کا تذکرہ کرتے ہوئے موجودہ زبوں حالی پر افسوس کا اظہار کیا۔ انھوں نے کہا کہ دہلی کے مسلمان گرچہ ان کی امداد کررہے ہیں تاہم وہ ناکافی ہے۔ لاس ویگاس کے ڈاکٹر اسلم عبداللہ نے کنونشن میں نظامت کے فرائض انجام دیے۔

      First published: