ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

جے این یو تنازعہ : تہاڑ جیل سے رہا ہوئے طلبہ یونین کے صدر کنہیا کمار

نئی دہلی : غداری کے الزام میں گرفتار جواہر لال نہرو یونیورسٹی (جے این یو) کی طلبہ یونین کے صدر کنہیا کمار کو دہلی ہائی کورٹ نے آج چھ ماہ کی عبوری ضمانت دے دی۔ یونیورسٹی کیمپس میں 9 فروری کو منعقد ہ ایک پروگرام کے دوران ملک مخالف نعرے لگانے کے الزام میں کنہیا کمار کے خلاف دہلی پولس نے بغاوت کا معاملہ درج کر کے 13 فروری کو گرفتار کیا تھا۔

  • UNI
  • Last Updated: Mar 03, 2016 06:45 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
جے این یو تنازعہ : تہاڑ جیل سے رہا ہوئے طلبہ یونین کے صدر کنہیا کمار
فائل فوٹو

نئی دہلی : غداری کے الزام میں گرفتار جواہر لال نہرو یونیورسٹی (جے این یو) کی طلبہ یونین کے صدر کنہیا کمار کو دہلی ہائی کورٹ کے ذریعہ چھ ماہ کی عبوری ضمانت ملنے کے بعد آج  جیل سے رہا ہوگئے ہیں۔ ادھر کل کنہیا کو ضمانت ملنے کے بعد رات میں طلبہ نے یونیورسٹی میں جم کر جشن منایا۔  خیال رہے کہ یونیورسٹی کیمپس میں 9 فروری کو منعقد ہ ایک پروگرام کے دوران ملک مخالف نعرے لگانے کے الزام میں کنہیا کمار کے خلاف دہلی پولس نے بغاوت کا معاملہ درج کر کے 13 فروری کو گرفتار کیا تھا۔


پٹیالہ ہاؤس کورٹ میں ان کی پیشی سے قبل ان پر حملے کے بعد انہوں نے اپنی ضمانت کے لئے پہلے سپریم کورٹ سے فریاد کی تھی لیکن عدالت عظمی نے یہ کہتے ہوئے ا نہیں ہائی کورٹ سے رجوع کرنے کو کہا تھا کہ یہ معاملہ اس قدر حساس نہیں ہے کہ اس کو براہ راست سپریم کورٹ میں لایا جائے۔ پیر کے روز معاملے کی سماعت کرتے ہوئے ہائی کورٹ نے اپنا فیصلہ بدھ تک کے لئے محفوظ رکھ لیا تھا۔


سماعت کے دوران ہائي کورٹ نے دہلی پولس سے پوچھا کہ کیا ان کے پاس کنہیا کمار کے خلاف کوئی ایسی سی سی ٹی وی فوٹیج یا دیگر ثبوت ہیں جن کی بنیاد پر یہ ثابت کیا جا سکے کہ 9 فروری کو کنہیا نے ملک مخالف نعرے لگائے تھے۔


دہلی پولس نے کہا تھا کہ ان کے پاس متعلقہ واقعہ کی جو ویڈیو فوٹیج موجود ہیں ان میں کنہیا نعرے لگاتے ہوئے نہیں دکھائی دے رہے ہیں، لیکن ایسے گواہ موجود ہیں جنہوں نے انہیں نعرے لگاتے ہوئے دیکھا ہے۔ دہلی پولس کنہیا کو ضمانت دئے جانے کی مسلسل مخالفت کرتی رہی تھی۔

First published: Mar 02, 2016 11:22 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading