உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کانپور: ایک ہی رات میں دوسرا بڑا حادثہ، تیز رفتار ٹرک نے لوڈر نے ماری ٹکر، 5 کی موت

     اس حادثے میں پانچ افراد کی موت ہو گئی، جب کہ 7-8 لوگ زخمی ہوئے۔ تمام زخمیوں کو ہالیٹ اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔

    اس حادثے میں پانچ افراد کی موت ہو گئی، جب کہ 7-8 لوگ زخمی ہوئے۔ تمام زخمیوں کو ہالیٹ اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔

    اس حادثے میں پانچ افراد کی موت ہو گئی، جب کہ 7-8 لوگ زخمی ہوئے۔ تمام زخمیوں کو ہالیٹ اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Kanpur Dehat, India
    • Share this:
      کانپور۔ اتوار کانپور کے لوگوں کے لیے کالا  دن ثابت ہوا۔ گھاٹم پور علاقے میں ایک تالاب میں ٹریکٹر ٹرالی پلٹنے سے  جہاں 26 افراد کی موت ہو گئی، وہیں اہروان فلائی اوور پر ایک تیز رفتار ٹرک نے لوڈر کو ٹکر مار دی۔ اس حادثے میں پانچ افراد کی موت ہو گئی، جب کہ 7-8 لوگ زخمی ہوئے۔ تمام زخمیوں کو ہالیٹ اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔

      موصولہ اطلاع کے مطابق یہ خاندان منڈن رسومات کے لیے وندھیاچل دھام جا رہا تھا کہ اہروان فلائی اوور پر ان کی گاڑی کو حادثہ پیش آیا۔ ضلع مجسٹریٹ وشاک جی آئیر نے 5 لوگوں کی موت کی تصدیق کی ہے۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ حادثے میں 7 افراد شدید زخمی ہوئے ہیں، جنہیں بہتر علاج کے لیے ہالیٹ اسپتال منتقل کرا دیا گیا ہے۔

      وزیراعلیٰ نے دکھ کا اظہار کیا۔
      چیف منسٹر یوگی آدتیہ ناتھ نے کانپور ضلع میں سڑک حادثہ میں جانی نقصان پر گہرے دکھ کا اظہار کیا ہے۔ وزیراعلیٰ نے زخمیوں کو فوری طور پر اسپتال پہنچایا اور ضلعی انتظامیہ کے حکام کو ان کے مناسب علاج کی ہدایت کی۔ انہوں نے زخمیوں کی جلد صحت یابی کی دعا بھی کی۔ اس کے ساتھ ہی ضلع مجسٹریٹ اور اعلیٰ پولیس افسران کو موقع پر جاکر امدادی کام جنگی بنیادوں پر کرنے کی ہدایت دی گئی ہے۔

      کمپنی دے رہی ہے Mental Health ٹھیک رکھنے کیلئے 11دن کی چھٹی، تفصیل یہاں جانئے

      واضح ہو کہ اتر پردیش کے ضلع کانپور میں یاتریوں کو لے جانے والی ایک گاڑی بھیانک حادثہ کا شکار ہوئگی ہے۔ جس کے نتیجہ میں ستائیس افراد کی موت ہو گئی۔ وزیر اعظم نریندر مودی اور وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ نے ہلاکتوں پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔ حادثے کے بعد افراتفری کا ماحول پیدا ہوا۔ اسی دوران جائے حادثہ پر موجود لوگ مدد کے لیے بھاگے۔ ایمبولینس اور اہلکار موقع پر پہنچ گئے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: